انسان کو جہاز کی طرح اڑنے میں مدد دینے والا لباس تیار

لندن: ویسے تو دنیا میں اب صرف جہاز ہی نہیں بلکہ موٹر سائکلیں اور کاریں بھی اڑنے لگی ہیں،لیکن اب ایک ایسا لباس بھی تیار کرلیا گیا ہے، جسے پہن کر کوئی بھی انسان ہزاروں فٹ کی بلندی تک بیک وقت ہزاروں کلو میٹر تک اڑ سکتا ہے، س لباس کو لوہے اور دیگر مضبوط چیزوں سے تیار کیا گیا ہے، جب کہ اس میں 2 گیس ٹربائن انجن بھی لگائے گئے ہیں، لباس کو ایک کوٹ کی طرح بنایا گیا ہے، اور اس کے پیچھے 2 چھوٹے انجن نصب کیے گئے ہیں، اس لباس کو ’باڈی کنٹرولڈ جیٹ پاور سوٹ‘ کا نام دیا گیا ہے، جو خالصتا انسان اپنی جسمانی حرکت سے کنٹرول کرتا ہے

تفصیلات کے مطابق انسان کو کسی جہاز کی طرح اڑنے میں مدد فراہم کرنے والا لوہے کا لباس تیار کرلیا گیا، اس لباس کو انگلینڈ کے نوجوان رچرڈ براؤمنگ نے رواں برس مارچ 2017 میں بنایا تھا، جس پر کئی ماہ تک سخت محت، لاکھوں ڈالرز کی سرمایہ کاری اور اسے پہن کر اڑنے کے کم سے کم تین تجربات کیے گئے، جس کے بعد اس کے موجد کا نام ’گنیز ورلڈ ریکارڈ‘ میں شامل کرلیا گیا ہے،اس لباس کو پہننے والا شخص ایک گھنٹے میں 153 کلو میٹر سفر طے کر سکے گا، اس لباس کو پہننے والا شخص نہ صرف جہاز کی طرح اڑے گا، بلکہ وہ مرضی کے مطابق اپنے سفر کا رخ بھی تبدیل کر سکے گا۔