نیب ریفرنسز :حسن اور حسین نواز کو اشتہاری قرار دینے کی تعمیلی رپورٹ احتساب عدالت میں پیش

اسلام آباد: احتساب عدالت میں سابق وزیراعظم نواز شریف کے بیٹوں حسن اور حسین نواز کو اشتہاری قرار دینے کی تعمیلی رپورٹ عدالت میں پیش کردی گئی۔ تفصیلات کے مطابق اسلام آباد کی احتساب عدالت میں قومی احتساب بیورو (نیب) کی جانب سے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے صاحبزادوں کیخلاف دائر ریفرنسز کی سماعت ہو رہی ہے ،احتسا ب عدالت کے جج محمد بشیر کیس کی سماعت کر رہے ہیں ۔دوران سماعت حسن اور حسین نواز کو اشتہاری قرار دینے کی تعمیلی رپورٹ عدالت میں پیش کردی گئی،اور فلیگ شپ انوسٹمنٹ ریفرنس میں تفتیشی افسر محمد کامران کا بیان بھی قلمبند کرلیا گیا ہے۔تفتیشی افسر محمد کامران نے عدالت کو بتایا کہ حسن اور حسین نواز کی بذریعہ اشتہار طلبی کے عدالتی احکامات پر عمل درآمد کرایا گیا۔ دونوں مفرور ملزمان کے اشتہارات رہائش گاہوں کے باہر اور عدالتی نوٹس بورڈ پر آویزاں کیے گئے۔تفتیشی افسر نے عدالت سے استدعا کی کہ حسن اور حسین نواز جان بوجھ کر مفرور ہیں لہذا انہیں اشتہاری قرار دیا جائے۔ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نیب کی جانب سے حسین نواز کے چار بینک اکاؤنٹس کی تفصیل بھی عدالت میں پیش کی گئی ہیں جس کے مطابق حسین نواز کے اسٹینڈرڈ چارٹرڈ بنک میں چار اکاوٴنٹس ہیں اور رقم بھی موجود ہے، ایک بنک اکاوٴنٹ میں 3992 ڈالرز اور دوسرے میں 4272 یورو موجود ہیں، حسین نواز کے تیسرے بنک اکاونٹ میں 207.53 پاوٴنڈز اور چوتھے اکاونٹ میں 382381 روپے موجود ہیں۔واضح رہےکہ نیب نے پاناما کیس کے فیصلے کی روشنی میں شریف خاندان کے خلاف تین اور وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے خلاف ایک ریفرنس دائر کیا ہے۔