مسئلہ کشمیرایٹمی جنگ کا پیش خیمہ ہے،جنرل زبیرمحمودحیات

اسلام آباد:چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی جنرل زبیرمحمودحیات کا کہنا ہے کہ مسئلہ کشمیر بدستور جوہری جنگ کے خطرات کا پیش خیمہ ہے، جب کہ بھارت سے تعلقات کا راستہ صرف کشمیر سے ہوکر گزرتا ہے اس میں کوئی باس پاس نہیں۔تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں’ ’جنوبی ایشیا کی علاقائی جہتیں اور تذویراتی خدشات‘‘ کے موضوع پر ہونےو الی 2 روزہ بین الاقوامی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئےچیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی جنرل زبیرمحمودحیات نے کہا کہ بھارت خطےمیں امن واستحکام کوخطرات سےدوچارکررہاہے، بھارت آگ کے ساتھ کھیل رہا ہے، ٹی ٹی پی ،بلوچ علیحدگی پسندوں اور ’’را‘‘ کے ذریعے پاکستان میں دہشت گردی کرا رہا ہے ،بھارت کی جانب سےایل اوسی پر1200سےزائدسیزفائرکی خلاف ورزیاں کی گئی ہیں ۔چیرمین جوائنٹ چیفس کا کہنا تھا مسئلہ کشمیر بدستور جوہری جنگ کے خطرات کا پیش خیمہ ہے، جب کہ بھارت سے تعلقات کا راستہ صرف کشمیر سے ہوکر گزرتا ہے اس میں کوئی باس پاس نہیں،کشمیر میں بھارتی فوج کا ظلم اور پاکستان کی طرف جنگی ہیجان واضح ہے، مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی مظالم اور پاکستان کے خلاف رویہ اس کی مثال ہے،کشمیرمیں ریاستی جبرکرکے90ہزارسےزائدکشمیری شہیدکردیئےگئے،پیلٹ گن کےاستعمال سےہزاروں کشمیریوں کی آنکھیں متاثرہوئیںہیں۔ چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی نے کہا کہ افغانستان میں عدم استحکام خطےمیں مسائل کاباعث ہے،ماحولیاتی تغیرات اورآبی مسائل،پیچیدہ چیلنجزکومزیدبڑھارہےہیں،غیرریاستی عناصرکےذریعےجنوبی ایشیاءکوعدم استحکام کاشکارکیاجارہاہے،جیواکنامکس اورجیوپولیٹیکل مفادات ایک دوسرےسےمتصادم ہیں،مجموعی باہمی ترقی کیلئےابھی بہت سےممالک کوسمجھناہوگابیرونی طاقتیں بڑےتذویراتی ڈیزائنزکوآگےبڑھانےکےلیےکوشاں ہیں،عالمی سطح پرطاقت کاحصول جنوبی ایشیاءمیں عدم استحکام کاباعث ہے۔