پُر امن احتجاج کرنے پر میرے خلاف دہشت گردی کا مقدمہ بنایا گیا ،عمران خان

اسلام آباد :چئیرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان کا کہنا ہے کہ پر امن احتجاج کرنے پر میرے خلاف دہشت گردی کا کیس بنا یا گیا۔تفصیلات کے مطابق انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پی ٹی وی حملہ، پارلیمنٹ حملہ اور ایس ایس پی عصمت جونیجو تشدد کیس کی سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سربراہ تحریک انصاف عمران خان نے کہا کہ ملک میں شفاف انتخابات کے لیے پرامن احتجاج کر رہے تھے، ان کے خلاف سیاسی بنیادوں پر کیس بنایا گیا، پر امن احتجاج کے اوپردہشت گردی کاکیس بنا دیا گیا، اگر یہ لوگ مجھ پر دہشت گردی کے کیس کرسکتے ہیں تو کسی پر بھی کرسکتے ہیں، یہ لوگ دہشت گردی کے نام پر کسی کے بھی وارنٹ نکال سکتے ہیں، یہ ایک سیاسی کیس تھا۔چیرمین پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ ملک کا سب سے بڑا مسئلہ منی لانڈنرگ ہے، جس دن اسحاق ڈار کا نام نیب میں آیا انہیں اسی دن مستعفی ہونا چاہیے تھا، ان پر اربوں کی کرپشن کا کیس ہے، منی لانڈرنگ کرنے والا ملک کا وزیر خزانہ کیسے ہوسکتا ہے۔واضح رہے کہ عمران خان آج انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش ہوئےاور ضمانت کی درخواست دائر کی جس پر عدالت نے 2,2لاکھ روپے کے مچلکوں کے عوض پی ٹی وی حملہ، پارلیمنٹ حملہ اور ایس ایس پی عصمت جونیجو تشدد کیسزمیں عمران خان کی دراخوست ضمانت منظور کرلی۔