بھارت میں مردہ بچہ آخری رسومات سے قبل زندہ ہوگیا

نئی دہلی: بھارتی دارالحکومت کے ایک مہنگے اسپتال کے ڈاکٹرز کی جانب سے مردہ قرار دیا گیا بچہ آخری رسومات سے قبل زندہ ہوگیا، جس کے بعد نہ صرف والدین، ڈاکٹرز ،انتظامیہ بلکہ عوام بھی پریشان ہوگیا، جب کہ بچے کو مردہ قراردینے والے ڈاکٹرز کی چھٹی کرکے معاملے کی تحقیقات کا آغاز کردیا گیا، بھارت کے دارالحکومت نیو دہلی کے میکس سپر اسپیشلٹی اسپتال میں جڑواں بچوں کی پیدائش ہوئی جس میں سے ایک بچہ مردہ تھا جب کہ دوسرے بچے کو بھی ڈاکٹرز نے کچھ گھنٹوں بعد مردہ قرار دے دیا،ڈاکٹر نے بچے کو مردہ قرار دے کر پلاسٹک کے بیگ میں پیک کر دیا اور جب والدین بچوں کو آخری رسومات کے لیے لے جا رہے تھے تو انہوں نے بچوں کے بیگ میں کچھ حرکت محسوس کی، جس کے بعد بچے کو دوسری قریبی اسپتال لے جایا گیا، جہاں پتہ چلا کہ بچہ ابھی زندہ ہے۔
تفصیلات کے مطابق بھارتی دارالحکومت کے ایک مہنگے اسپتال کے ڈاکٹرز کی جانب سے مردہ قرار دیا گیا بچہ آخری رسومات سے قبل زندہ ہوگیا،واقعے کے بعد پرائیویٹ اسپتالوں میں مہنگا علاج ہونے کے باوجود صحت کی سہولیات کے حوالے سے بڑے پیمانے پر غم و غصے کی لہر پائی جاتی ہے، نئی دہلی کے وزیراعلیٰ اروند کیجریوال نے واقعے کو افسوسناک قرار دیتے ہوئے انکوائری کا حکم دے دیا ہے ، دوسری جانب میکس اسپتال کی انتظامیہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ اس واقعے نے ہمیں بھی ہلا کر رکھ دیا ہے اور واقعے میں ملوث ڈاکٹر کو جبری رخصت پر بھیج کر تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں۔