شادی موٹاپے کا باعث

گلاسکو: ویسے تو شادی متعدد بڑی بیماریوں سے محفوظ بھی رکھتی ہے، تاہم جہاں شادی کے بے شمار طبی و جسمانی فوائد ہیں، وہیں یہ موٹاپے کا باعث بھی ہے، آپ نے اپنے ارد گرد دیکھا اور محسوس کیا ہوگا کہ جو لوگ شادی کرتے ہیں وہ دیکھتے ہی دیکھتے موٹے یا صحت مند ہوجاتے ہیں، اب اسکاٹ لینڈ کے ماہرین کی جانب سے کی گئی ایک تحقیق میں بھی بتایا گیا ہے کہ شادی موٹاپے کا باعث بنتی ہے، تحقیق کے مطابق اس کی اصل وجہ شادی کے بعد کھانے کی مقدار میں اضافہ ہوجانا ہے، جبکہ نوبیاہتا جوڑے جسمانی طور پر زیادہ سرگرم نہیں رہتے یا ورزش سے دور ہونے  لگتے ہیں، جس کی وجہ سے جسمانی وزن بڑھنے لگتا ہے، اس سے قبل ایک اور امریکی تحقیق میں یہ دعویٰ کیا گیا تھا کہ میاں بیوی کے درمیان پیار جتنا بڑھتا ہے، جسمانی وزن بھی اسی طرح تیزی سے بڑھتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق گلاسکو یونیورسٹی کی تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ شادی کے بعد نوبیاہتا جوڑے کا جسمانی وزن بڑھنے کا امکان بہت زیادہ ہوتا ہے، تحقیق میں بتایا گیا کہ شادی کے ایک سال بعد جوڑے کے جسمانی وزن میں اوسطاً دو سے ڈھائی کلو گرام وزن بڑھ سکتا ہے جبکہ جن لوگوں پر چربی زیادہ جلدی بڑھتی ہے، وہ تین ماہ کے دوران ہی دو کلو اضافی وزن کے مالک بن جاتے ہیں، تحقیق میں مزید بتایا گیا کہ شادی کے بعد لوگوں کو اپنے جسمانی وزن پر نظر رکھنے کی ضرورت ہے، کیونکہ موٹاپے کا شکار ہونا خود اعتمادی کو نقصان پہنچاتا ہے جبکہ شریک حیات سے تعلق بھی متاثر ہوسکتا ہے۔