موبائل کمپنیوں نے گزشتہ مالی سال 10 ارب روپے کمائے

کراچی: پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی کی تازہ رپورٹ کے مطابق گزشتہ مالی سال میں موبائل کمپنیوں نے 10 ارب روپے سے زیادہ کا منافع کمایا، جب کہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ٹیلی کام سیکٹر میںغیرملکی سرمایہ کاری مسلسل کم ہورہی ہے، سال 2013-14 میں 1.815ارب ڈالر اور مالی سال 2014-15میں 1ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کی گئی تھی تاہم سال 2015-16کے دوران 72کروڑ 23لاکھ ڈالر کی سرمایہ کاری کے بعد 2016-17میں سرمایہ کاری 63کروڑ 49لاکھ ڈالر رہ گئی ہے، سیلولر موبائل فون کمپنیوں نے 2016-17کے دوران 48کروڑ 61لاکھ ڈالر کی سرمایہ کاری کی جو گزشتہ مالی سال کے مقابلے بہت کم ہے۔

تفصیلات کے مطابق پی اے ٹی کی تازہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اگرچہ موبائل کمپنیوں نے گزشتہ مالی سال 10 ارب روپے سے زائد کا منافع کمایا، تاہم ملک کے ٹیلی کام سیکٹر میں مسلسل غیر ملکی سرمایہ کاری میں کمی ہو رہی ہے، پی اے ٹی نے مالی سال 2016-17 کی رپورٹ جاری کردی ہے جس کے مطابق مالی سال 2016-17کے دوران ٹیلی کام انڈسٹری نے 467ارب 60کروڑ روپے سے زائد کی آمدن حاصل کی جو مالی سال 2015-16کے مقابلے میں 10ارب روپے زیادہ ہے، رپورٹ میں کہا گیاکہ گلوبل انفارمیشن ٹیکنالوجی مارکیٹ کا حجم 3.2 ٹریلین ڈالر میں سے پاکستان کا حصہ 2.8 ارب ڈالر تک محدود ہے، پاکستان میں ای کامرس لین دین کی مالیت 60سے 100ملین ڈالر کے درمیان ہے جو 2020تک 1ارب ڈالر تک بڑھنے کی توقع ہے، ملک میں 95فیصد ای کامرس ادائیگیاں نقد (کیش آن ڈیلیوری) کی شکل میں کی جارہی ہیں۔