ٹیکس کے لیے محفوظ پناہ گاہوں کی حیثیت والے ممالک میں بحرین اور یو اے ای بھی شامل

برسلز: ٹیکس سے محفوظ پناہوں کی حیثیت رکھنے والے ممالک میں پاناما اور سوئٹزرلینڈ جیسے ممالک تو بدنام ہیں، تاہم اب  یورپی یونین نے ٹیکس کے لیے محفوظ پناہ گاہ کہلانے والے ممالک کی بلیک لسٹ جاری کردی ہے، جس میں حیران کن طور پر پاناما، بحرین اور متحدہ عرب امارات سمیت 17 ممالک کے نام شامل ہیں، تاہم یورپی یونین کی جانب سے فی الحال ان ممالک کے خلاف کسی قسم کی پابندیوں کی سفارش نہیں کی گئی ۔

تفصیلات کے مطابق ٹیکس کے لیے محفوظ پناہ گاہوں کی حیثیت رکھنے والے ممالک میں بحرین اور یو اے ای کے نام بھی شامل ہیں، یورپی یونین نے اس بلیک لسٹ میں ایسے ممالک شامل کیے گئے ہیں جنہیں ٹیکس کی محفوظ پناہ گاہ سمجھا جاتا ہے، ان 17 ممالک میں بحرین، بارباڈوس، منگولیا، جنوبی کوریا، تیونس اور متحدہ عرب امارات کے نام بھی شامل ہیں،  غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق یورپی یونین کے وزرائے خارجہ کی جانب سے متفقہ طور پر ایک بلیک لسٹ پر اتفاق کیا گیا۔