سانحہ ماڈل ٹائون رپورٹ پر سابق صدر زرداری اور طاہر القادری کا شہبازشریف سے استعفے کا مطالبہ

لاہور: عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے سابق صدر و شریک چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی آصف علی زرداری کیساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ سانحہ ماڈل ٹاؤن میں نواز شریف کی ایما پر شہباز شریف نے قتل عام کرایا۔ اس رپورٹ پر صفحہ 65 سے معاملات شروع ہوتے ہیں جس میں کہا گیا کہ یہ مفروضہ غلط ہے کہ فورس یہاں رکاوٹیں ہٹانے آئی تھی، بیرئیر کوئی مسئلہ نہیں تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کی حکومت کو بدلنے کے لیے میری جدوجہد تھی جسے سبوتاژ کرنے کے لیے سانحہ ماڈل ٹاؤن کیا۔تفصیلات کے مطابق سابق صدر آصف علی زرداری کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے سربراہ پاکستان عوامی تحریک ڈاکٹر طاہر القادری کا کہناتھاکہ جسٹس باقر نجفی کی رپورٹ میں گیا ہے کہ خفیہ اور ظاہر طور پر یہ حکم دیا گیا تھا کہ جتنی لاشیں گرائی جاسکیں گرائیں مگر یہ لوگ اپنے مقاصد میں کامیاب نہ ہوسکیں، یہ حکم وزیراعلیٰ نے دیا جو رپورٹ میں درج ہے۔ اس موقع پرپیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری کا کہناتھاکہ علامہ صاحب سے ہماری پرانی وابستگی ہے ،پیپلز پارٹی نے جہاں ضرورت ہوئی اپنی آواز اٹھائی ہے،ماڈل ٹاؤن کے سانحہ پر اپنی آنکھیں بند نہیں کر سکتے،وزیراعلیٰ شہبازشریف کو استعفا دینا چاہیے ،سانحہ ماڈل ٹاؤن ظلم کی بدترین مثال ہے ،ہم جیلوں میں گئے ہیں ہمیں پتا ہے حکومت کیسے دباؤ ڈالتی ہے،انہوں نے کہاکہ ہم ان کے ساتھ سیٹل کریں گے اور سڑکوں پر نکلیں گے ،اگر علامہ صاحب سیاسی ڈیل کا کہیں گے تو کرلیں گے،علامہ صاحب سے کوئی سیاسی ڈیل نہیں کی ہمیں سیاست میں علامہ صاحب کےساتھ جانے پرکوئی اعتراض نہیں،ہر چیز، پوزیشن کو ضرور دیکھا جاسکتا ہے،غور کیا جا سکتا ہے،ہم علامہ صاحب کے ساتھ کھڑے ہیں ،ہم نے جمہوریت کیلئے کام کیا ، مغل بادشاہت کیلئے نہیں ۔