5 جی ٹیکنالوجی سے لیس پہلا اسمارٹ فون متعارف

نیویارک: موٹرولا نے دنیا کے پہلے 5 جی فون موٹو زی تھری کو متعارف کرا دیا ہے۔
جی ہاں موٹرولا نے فائیو جی کے شعبے میں تمام کمپنیوں کو پیچھے چھوڑ دیا ہے اور اس کا کہنا ہے کہ موٹو زی تھری پہلا فون ہے جو کہ فائیو جی موٹو موڈیولر کی بدولت 5 جی نیٹ ورک کے لیے اپ گریڈ ہوسکے گا۔
اس حوالے سے بات کرنے سے پہلے اس فون کے بنیادی فیچرز جان لیں جو کہ موٹو زی تھری پلے کی طرح گلاس اور میٹل باڈی کے ساتھ ہے، جس میں 6 انچ کی بڑی امولیڈ اسکرین دی گئی ہے جس میں اوپر اور نیچے بیزل کی شرح کچھ کم کردی گئی ہے۔
اس میں 4 جی بی ریم اور 64 جی بی اسٹوریج دی گئی ہے۔ہیڈفون جیک تو اس میں موجود نہیں مگر ڈونگل کنورٹر کو اس مقصد کے لیے استعمال کیا جاسکتا ہے۔
اب بات کرتے ہیں فائیو جی موٹو موڈیولر کی، جو کہ اس فون کو ویرائزن کے فائیو جی نیٹ ورک سے کنکٹ کرسکے گا۔یہ موٹو موڈ 2019 کے آغاز میں دستیاب ہوگا۔
موٹرولا کے مطابق فائیو جی موٹو موڈ کی بدولت اس فون کی ڈیٹا اسپیڈ 5 جی بی فی سیکنڈ تک پہنچ جائے گی یعنی ایک منٹ میں 60 فل ایچ ڈی فلمیں (اگر 4.84 جی بی کی ہوں) ڈاؤن لوڈ کرنا ممکن ہوجائے گا۔
یہ موڈیولر اٹیچ منٹ فرنٹ، سائیڈ اور بیک پر موجود 4 ملی میٹر ویو موڈیولز پر نصب کی جائے گی تاکہ فائیو جی نیٹ ورک سے کنکٹ ہوسکے۔
فائیو جی نیٹ ورک پر بلاتعطل فور کے لائیو اسٹریم اور رئیل ٹائم وی آر کا تجربہ ممکن ہوگا مگر بیٹری پاور جلد ختم ہوگی
ویسے موٹو زی تھری فون حقیقی معنوں میں فائیو جی فون نہیں کیونکہ یہ ٹیکنالوجی اس کے اندر موجود نہیں ہوگی تاہم موڈیولر کی مہربانی سے اسے اس تیزترین نیٹ ورک چلنے والے پہلے فون کا اعزاز ضرور مل گیا ہے۔
اس فون کی قیمت 480 ڈالرز (50 ہزار پاکستانی روپے سے زائد) ہوگی اور یہ 16 اگست کو مختلف مقامات پر فروخت کے لیے پیش کیا جائے گا، تاہم فائیو جی موڈیولر کی قیمت کا فی الحال اعلان نہیں کیا گیا۔

تبصرے بند ہیں.