اسامہ کےبیٹے نے نائن الیون حملےکے’’اصل کردار‘‘کی بیٹی سے شادی کرلی

اسامہ بن لادن کے اہل خانہ نے انکشاف کیا ہے کہ اسامہ بن لادن کے بیٹے حمزہ بن لادن نے نائن الیون حملے کے اصل کردارمحمد عطا کی بیٹی سے شادی کرلی ہے۔

برطانوی اخبار ڈی گارڈین کی رپورٹ کے مطابق اسامہ بن لادن کے بھائی احمد اورحسن العطاس نے انٹرویو میں بتایا کہ حمزہ بن لادن نے القاعدہ میں انتہائی اہم عہدے پراپنی جگہ بنالی ہے تاکہ اپنے والد کی موت کا بدلہ لے سکے جنہیں 7 برس قبل پاکستان کے علاقے ایبٹ آباد میں امریکی فوجیوں نے ایک آپریشن کے دوران قتل کردیا تھا۔

واضح رہے کہ حمزہ بن لادن، اسامہ بن لادن کی تیسری شریک حیات خیریہ صابر کے بیٹے ہیں اورخیریہ صابراس وقت ایبٹ آباد میں کمپاؤنڈ کے اندرموجود تھیں جب امریکی فوجیوں نے آپریشن کیا تھا۔

اسامہ بن لادن نے آخری وقت میں اپنے چاہنے والوں کو ایک پیغام دیا تھا جس میں واشنگٹن، لندن، پیرس اورتل ابیب کے خلاف جنگ جاری رکھنے کی ترغیب دی گئی تھی۔

اسامہ بن لادن کے سوتیلے بھائی احمد العطاس کا کہنا تھا کہ ہم نے سنا ہے کہ حمزہ بن لادن نے محمد عطا کی بیٹی سے شادی کرلی لیکن ہمیں نہیں معلوم کہ وہ کہاں ہیں شاید وہ افغانستان میں ہو۔

واضح رہے کہ مغربی ممالک کی خفیہ ایجنسیاں گزشتہ 2 برس سے حمزہ بن لادن کی تلاش میں پوری طرح مصروف ہیں جسے اسامہ بن لادن کے بعد نوجوان نسل بہت تیزی سے اپنا ہیرو تسلیم کررہی ہے۔

خیال رہے کہ اسامہ بن لادن کا بیٹا خالد بھی ایبٹ آباد آپریشن میں جاں بحق ہوگیا تھا جبکہ ان کا تیسرا بیٹا سعد 2009 میں افغانستان میں ڈرون حملے میں جاں بحق ہوا تھا۔

کمپاؤنڈ سے جمع کئے گئے خطوط سے واضح ہوتا ہے کہ اسامہ بن لادن اپنے بیٹے سعد کا بدلہ لینے کے لئے حمزہ کو تیار کررہے تھے۔

حسن العطاس نے کہا کہ جب ہم نے سوچا کہ سب کچھ ختم ہوگیا لیکن حمزہ بن لادن نے کہا کہ میں اپنے والد کا بدلہ لینے کے لیے جارہا ہوں، اس کے بعد دوبارہ ملاقات نہیں ہوئی۔

اگرحمزہ بن لادن میرے سامنے ہوتا تو میں اس کو کہتا کہ اللہ تمھاری رہنمائی کرے، جو کچھ کرنے جارہے ہو اس کے بارے میں 2 مرتبہ سوچنا اوراپنے والد کے نقش قدم پرمت چلنا، تم انتہائی منفی اورروح کے اندھیرے گوشوں میں داخل ہورہے ہو۔

خیال رہے کہ گزشتہ برس 6 جنوری کو امریکا نے عالمی دہشت گرد تنظیم القاعدہ کے بانی رہنما اسامہ بن لادن کے بیٹے اور وارث حمزہ بن لادن کا نام دہشت گردوں کی بلیک لسٹ میں شامل کردیا تھا۔

امریکی محکمہ خارجہ نے حمزہ بن لادن کا نام عالمی دہشت گردوں کی فہرست میں شامل کرنے کا حکم دیا تھا۔

اسامہ بن لادن 2011 میں امریکا کی خصوصی فورسز کے ہاتھوں ایک آپریشن کے دوران ہلاک ہوگئے تھے جس کے بعد حمزہ بن لادن نے اپنے والد کی جگہ القاعدہ میں متحرک نظر آئے۔

تبصرے بند ہیں.