پیرول رہائی کے بعدنوازشریف ، مریم اور کیپٹن صفدر جاتی عمرہ منتقل

 

لاہور: نواز شریف ، مریم نواز اور کیپٹن(ر) صفدر کو پیرول پر رہا کردیاگیا، جس کے بعد تینوں شخصیات کو خصوصی طیارے کے ذریعے لاہور لایا گیا اور ایئر پورٹ سے سخت سیکورٹی حصارمیں جاتی عمرہ منتقل کردیاگیا ، جاتی عمرہ میں ان کے گھر کو سب جیل قرار دیدیا گیاہے ۔نجی ٹی وی کے مطابق مسلم لیگ ن کے صدر شہبازشریف نے ہوم سیکریٹری پنجاب کو 5روز کیلئے نوازشریف ، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کی پیر ول پر رہائی کیلئے درخواست دی تھی جس پر حکومت نے ان کو ابتدائی طور پر 12گھنٹے کیلئے رہا کردیاہے جس کے بعد پیر ول پر رہائی کی مدت میں توسیع کی جائیگی۔شہبازشر یف پیرول پر رہائی کے بعد سخت سکیورٹی میں نواز شریف ، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کو لیکراسلام آباد ایئر پورٹ پہنچے اور خصوصی طیارے کے ذریعےانہیں لاہور ایئر پورٹ پہنچایاگیا ۔ جہاںسے ان کو سخت سیکورٹی کے حصار میں الگ الگ گاڑیوں میں جاتی عمرہ منتقل کردیا گیا ۔نوازشریف ، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کو لاہور میں صرف جاتی عمرہ تک محدود رکھا جائے گا اور جاتی عمرہ سے کسی اور جگہ نقل وحمل کی اجازت نہیں ہوگی ، تینو ں شخصیات صرف اپنے خاندان کے افراد سے ملاقات کر سکیں گی ۔

نواز شریف جاتی عمرہ میں قیام کے دوران اپنی اہلیہ بیگم کلثوم نواز کی نمازہ جنازہ ، تدفین کے عمل میں شرکت کریں گے ۔اس دوران اڈیالہ جیل کا عملہ نگرانی کے لئے تینو ں شخصیات کے ہمرا ہ رہے گا جبکہ جاتی عمرہ کی سیکورٹی میں سخت اضافہ کردیا گیاہے اور پولیس کی بھاری نفری تعینات کی گئی ہے ۔جاتی عمرہ منتقلی کے بعد جاتی عمرہ میں نوازشریف کی رہائشگاہ کو سب جیل قرار دیدیا گیا ہے ۔ مسلم لیگ ن کے رہنما رانا ثناکےمطابق اب نوازشریف ، مریم نواز اور کیپٹن (ر ) صفدر کو جاتی عمرہ سب جیل سے بیگم کلثوم نواز کی نماز جناہ اور تدفین میں شرکت کیلئے 12گھنٹے کیلئے پیرول پررہا کیا جائے گااور باقی اوقات میں وہ بدستور جیل میں رہیں گے چاہے جاتی عمرہ سب جیل میں رہیں یا اڈیالہ جیل میں رہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم حکومت سے کوئی مطالبہ نہیں کریں گے ۔

تبصرے بند ہیں.