وزیراعظم سے میڈیا کے 8 ارب کی ادائیگی کیلئے ہدایات کی درخواست

0

کراچی:آل پاکستان نیوز پیپرز سوسائٹی (اے پی این ایس) اور پاکستان براڈ کاسٹنگ ایسوسی ایشن (پی بی اے) نے وزیر اعظم عمران خان سے درخواست کی ہے کہ میڈیا کے 8 ارب روپے کے واجبات کی ادائیگی کے لیے متعلقہ وزارتوں کو ہدایات جاری کی جائیں۔
اے پی این ایس اور پی بی اے نے وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کے بیان پر شدید تحفظات کا اظہار کیا ہے۔
وفاقی وزیر اطلاعات نے دعویٰ کیا تھا کہ میڈیا انڈسٹری کے آدھے سے زائد واجبات کی ادائیگی میڈیا ہاؤسز کو کر دی گئی ہے لیکن اس کے باوجود اس رقم کو ملازمین کی تنخواہوں کی ادائیگی کے لیے استعمال نہیں کیا گیا۔
فواد چوہدری نے کہا تھا کہ میڈیا کے ایک ارب 30 کروڑ روپے کے واجبات میں سے 60 کروڑ روپے میڈیا ہاؤسز کو جاری کر دیئے گئے ہیں۔
اے پی این ایس اور پی بی اے کی جانب سے وزیر اطلاعات کے بیان کو جھوٹ اور میڈیا صنعت میں تنازعات کا باعث قرار دیا گیا۔
ایسوسی ایشنز کی جانب سے کہا گیا کہ حکومت پر میڈیا کی واجب الادا رقم ایک ارب 30 کروڑ روپے نہیں بلکہ 8 ارب روپے ہے اور اس میں سے حکومت نے 10 فیصد کی ادائیگی بھی نہیں کی ہے۔
بیان میں کہا گیا کہ ان 8 ارب روپے میں سے تقریباً 3 ارب روپے 4 سال سے زائد عرصے سے حکومت پر واجب الادا ہیں جب کہ باقی 3 ارب روپے 9 سے 15 ماہ کے درمیان حکومت پر واجب الادا ہیں۔حکام کی جانب سے کہا گیا کہ زیادہ تر رقم وفاقی حکومت اور پنجاب حکومت کو ادا کرنی ہے۔
چیف جسٹس نے میڈیا واجبات کی ادائیگی کے لیے خصوصی اجلاس طلب کیا تھا اور وفاقی اور صوبائی حکومتوں سے کہا تھا کہ وہ 30 روز کے اندر غیر متنازع ادائیگیاں کر دیں تاہم تقریباً 60 روز گزر جانے کے باوجود واجبات کی ادائیگی اب تک نہیں کی گئی ہے۔
اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ وزیر اعظم نے اے پی این ایس ایگزیکٹو کمیٹی کو 16 اکتوبر 2018 کو یقین دہانی کرائی تھی، لیکن اس کے باوجود اب تک مکمل رقم کا 10فیصد بھی ادا نہیں کیا گیا ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.