شوہر کے ظلم سے تنگ ہندو خاتون پاکستان پہنچ گئی،اسلام قبول کر لیا

شوہر کے ظلم سے تنگ بھارتی خاتون نے پاکستان آکر اسلام قبول کرلیا اور گوجرانوالہ کے نوجوان سے شادی کرلی۔

شوہر کے تشدد سے تنگ بھارتی خاتون پاکستان بھاگ آئی، چندی گڑھ سے تعلق رکھنے والی ٹینا نے اسلام قبول کرکے گوجرانوالہ کے سلیمان سے شادی کرلی۔

سلمان زیرو پوائنٹ کا رہائشی ہے اور اس نے ٹینا کے سابق شوہر کے تشدد کی ویڈیوز بھی سنبھال کر رکھی ہیں۔

ٹینا کی سلمان سے سوشل میڈیا پر دوستی ہوئی جو محبت میں بدل گئی اور اب بھارتی خاتون پاکستان آکر مسلمان ہوگئی ہے۔ ٹینا نے لاہور میں ایک مدرسہ میں اسلام قبول کیا اور اس نے اپنا نام عائشہ رکھا۔

بھارتی خاتون عائشہ نے کہا ہے کہ وِزیراعظم عمران خان سے اپیل ہے کہ وہ بھارتی میڈیا کے جھوٹ کا جواب دیں، میرے ساتھ کوئی زور زبردستی نہیں کی گئی، میں نے اپنی مرضی سے اسلام قبول کیا اور سلمان سے شادی کی، وزیر اعظم عمران خان ہمیں تحفظ دیں۔

سلمان کا کہنا ہے کہ سوشل میڈیا کی دوستی محبت میں بدلی، 2015ء سے دوستی چل رہی تھی جس کے بعد شادی کا فیصلہ ہوا اب  یہ مرضی سے پاکستان آئی ہیں مسلمان ہوئیں اور ہم نے نکاح کیا، وزیراعظم عمران خان مدد کریں ہمیں تحفظ دیں اور بیوی کو جلد از جلد پاکستانی شہریت دی جائے۔

دوسری جانب بھارتی حکومت نے الزام عائد کیا ہے کہ سلیمان نے اسے زبردستی اسلام قبول کروانے کے بعد یرغمال بنا رکھا ہے۔ بھارتی دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ ٹینا اپنے شوہر امیش سے ناراض ہو کر پاکستان آگئی ہے حکومت پاکستان اسے فوری واپس بھیج دے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.