وزیر اعظم کے ہاتھ میں تسبیح اور کتا

کامیاب کرکٹر سے سیاستدان اور پھر وزیراعظم بننے والے عمران خان کسی بھی تعارف کے محتاج نہیں کیونکہ انہیں کرکٹ سے ہی پوری دنیا میں بہت زیادہ شہرت ملی تاہم اب وہ وزیراعظم بن چکے ہیں لیکن یہاں پر قابل امرذکریہ ہے کہ ان کی ایک تصویر سوشل میڈیا پرتیزی کے ساتھ وائرل ہو رہی ہے جس پر پی ٹی آئی اورحکومت کے مخالفین آمنے سامنے آ گئے ہیں۔

نجی ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی یہ تصویر فیس بک صارف کی جانب سے شیئرکی گئی ہے تاہم جیسے ہی سوشل میڈیا پرآئی تو پی ٹی آئی کے کارکنان نے عمران خان کا دفاع کرنا شروع کر دیا جبکہ حکومت مخالفین نے تنقید کا نشانہ بنانا شروع کر دیا یعنی دونوں حریفوں کے لفظی جنگ چھڑ گئی جبکہ ایسے ایسے کمنٹس کیے گئے جن کا یہاں ذکر کرنا بھی مناسب نہیں۔

اس تصویر میں دراصل معاملہ یہ زیر بحث آیا ہواہے کہ عمران خان نے جس ہاتھ سے جرمن شیفرڈ کتے کا پٹا پکڑا ہواہے اسی ہاتھ سے انہوں نے تسبیح بھی تھام رکھی ہے جس کے باعث بہت سارے پاکستانی سوشل میڈیا پرامڈ آئے اور کچھ نے تو عمران خان کو ” پلیت “ کہہ کر بھی مخاطب کر ڈالا ۔

ایک صارف تو بہت ہی زیادہ ’غصے‘میں آ گیا اور انہوں نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے لکھا کہ ” جس نے یہ تصویر نکالی ہے یا جس نے ترمیم کی ہے سب سے بڑا کتا وہ ہے ۔“

اس نوجوان نے تو عمران خان کی آکسفورڈ میں حاصل کی گئی تعلیم پرہی سوالات اٹھانے شروع کر دیے اور کہا کہ” کون کہتاہے کہ وہ آکسفورڈ سے پڑھے ہوئے ہیں ، ان کی طرف دیکھو انہوں نے عجیب و غریب نوکریاں کرکے صرف وقت ضائع کیا ہے ۔“

ایک صارف نے دفاع میں میدان میں آتے ہوئے کہا کہ ”عزت اور ذلت اللہ کے ہاتھ میں ہے ، اسے عزت اور رتبہ دیا اور تم لوگوں کو ذلت دی ۔“

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.