پی ٹی آئی رہنما علیم خان کو ضمانت پر رہا کرنے کا حکم

لاہور ہائیکورٹ نے تحریک انصاف کے رہنما علیم خان کی درخواست ضمانت منظور کرلی۔

سابق وزیر بلدیات علیم خان نے نیب کی گرفتاری کو لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کیا تھا اور ضمانت کی درخواست کی تھی۔

علیم خان کی درخواست پر جسٹس علی باقر نجفی کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے سماعت کی۔ہائی کورٹ نےعبدالعلیم خان کو ایک کروڑ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا ہے۔

عدالت نے استفسار کیا کہ نیب نے اب تک تفتیش میں کیا تلاش کیا ہے، اس پر نیب نے عدالت کو بتایا کہ علیم خان نے بیرون ممالک میں غیر قانونی ٹرانزکشن کی ہیں جب کہ علیم خان کے وکیل نے اپنے دلائل میں کہا کہ ان کے مؤکل نے جو اثاثے بنائے اور رقوم منتقل کیں وہ ڈکلیئر ہیں، ان پر کرپشن اور ناجائز اثاثوں کا کوئی ٹیکس نہیں۔

عدالت نے نیب سے استفسار کیا کہ علیم خان کے خلاف ریفرنس کب دائر کیا جائے گا اس پر نیب نے بتایا کہ ریفرنس کل دائر کردیا جائے گا۔

نیب کے جواب پر عدالت نے کہا کہ جب تفتیش مکمل ہوگئی ہے تو کسی شخص کو غیر معینہ مدت تک جیل میں نہیں رکھا جاسکتا، اس لیے علیم خان کی ضمانت منظور کی جاتی ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.