پاک فوج کے 222 جرنیلوں میں واحد خاتون جنرل

پاک فوج میں مجموعی طور پر 222 جرنیل ہیں جن میں سے 2 فل جنرل ، 27 لیفٹیننٹ جنرل، 159 میجر جنرل اور 34 میڈیکل کور کے جنرل شامل ہیں۔ جرنیلوں کی اس فہرست میں صرف ایک خاتون نگار جوہر شامل ہیں جن کا تعلق میڈیکل کور سے ہے ۔

میجر جنرل نگار جوہر حاضر سروس جرنیلوں میں واحد اور مجموعی طور پر جرنیل کے عہدے تک پہنچنے والی پاکستان کی تیسری خاتون ہیں۔

انہوں نے 1985 میں پاک فوج کی میڈیکل کور میں شمولیت اختیار کی اوروہ 9 فروری 2019 کو ریٹائر ہوجائیں گی۔

خیبر پختونخوا کے ضلع صوابی کے علاقے پنج پیر سے تعلق رکھنے والی میجر جنرل نگار جوہر اس وقت پاک ایمریٹس ملٹری ہسپتال کی کمانڈنٹ کے عہدے پر خدمات سرانجام دے رہی ہیں ، اس سے قبل وہ آرمی میڈیکل کالج کے وائس پرنسپل کے عہدے پر بھی رہ چکی ہیں۔

انہیں 9 فروری 2017 کو آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے بریگیڈیئر سے میجر جنرل کے عہدے پر ترقی دی تھی۔

پاکستان کی تاریخ میں شاہدہ ملک وہ پہلی خاتون تھیں جو میجر جنرل کے عہدے پر پہنچیں ، انہیں 2002 میں اس وقت کے آرمی چیف جنرل پرویز مشرف نے بریگیڈیئر سے ٹوسٹار جرنیل کے عہدے پر ترقی دی تھی۔ وہ پاکستان آرمی کی میڈیکل کور کی ڈپٹی کمانڈر اور پاک فوج کی سرجن جنرل کے عہدے سے 2004 میں ریٹائر ہوئیں۔

پاکستان میں ٹو سٹار جنرل کے عہدے پر پہنچنے والی دوسری خاتون شاہدہ بادشاہ تھیں جو 2013 میں ریٹائر ہوئیں۔ ان کا تعلق بھی پاک فوج کی میڈیکل کور سے تھا اور وہ آرمی میڈیکل کالج راولپنڈی کے عہدے پر تعینات رہیں۔

تبصرے بند ہیں.