اعصاب شکن ٹیسٹ میچ۔بین سٹوکس نےآسٹریلیا کے منہ سے فتح کا نوالہ چھین لیا

ایشز سیریزکے تیسرے ٹیسٹ میچ میں انگلینڈ نے آسٹریلیا کوایک وکٹ سے شکست دے کر سیریزبرابرکردی۔

بین سٹوکس کی ناقابل شکست سنچری کی بدولت انگلینڈ نے آسٹریلیا کو تیسرے ایشز ٹیسٹ میچ میں سنسنی خیز اور اعصاب شکن مقابلے کے بعد 1 وکٹ سے شکست دے دی، دونوں ٹیموں کے درمیان پانچ میچوں کی سیریز 1-1 سے برابر ہو گئی۔

انگلش ٹیم نے 359 رنز کا ہدف میچ کے چوتھے روز اپنی دوسری اننگز میں 9 وکٹوں کے نقصان پر حاصل کیا، 286 رنز پر 9 وکٹیں گرنے کے بعد سٹوکس کینگروز بائولرز کے سامنے چٹان بن گئے، انہوں نے غیرمعمولی بلے بازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے حریف بائولرز کی خوب درگت بنائی۔

انہوں نے جیک لیچ کے ساتھ مل کر آخری وکٹ کی شراکت میں 76رنز جوڑ کر ٹیم کو فتح دلوائی،بین سٹوکس نے 8 چھکوں کی مدد سے 135 رنز کی ناقابل شکست اننگز کھیل کر آسٹریلیا کے منہ سے فتح کا نوالہ چھین لیا اور میچ کے بہترین کھلاڑی قرار پائے۔

دونوں ٹیموں کے مابین سیریزکے تیسرے اورآخری ٹیسٹ میچ کو کرکٹ کی تاریخ کا سب سے بہترین ٹیسٹ میچ قراردیا جارہا ہے کیونکہ اس میں انگلینڈ نے ناممکن کو ممکن کرکے دکھایا ہے۔

اتوار کو لیڈز ٹیسٹ میچ کے چوتھے روز انگلش ٹیم نے 156 رنز 3 کھلاڑی آئوٹ پر دوسری ادھوری اننگز دوبارہ شروع کی تو اسے کامیابی کیلئے مزید 203 رنز درکار تھے جبکہ جوروٹ 75 اور بین سٹوکس 2 رنز پر کھیل رہے تھے، دن کے چھٹے اوور میں نیتھن لیون نے روٹ کو آئوٹ کر کے ٹیم کو اہم کامیابی دلائی، وہ 77 رنز بنا کر آئوٹ ہوئے۔

اس کے بعد سٹوکس اور جونی بیئرسٹو نے مشکل وقت میں شاندار بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے پانچویں وکٹ کی شراکت میں 86 قیمتی رنز جوڑ کر ٹیم کا سکور 245 تک پہنچا دیا، یہ پارٹنرشپ کینگروز کیلیے خطرہ بن گئی تھی کہ یہاں پر ہیزلووڈ نے بیئرسٹو کو آئوٹ کر کے نہ صرف اہم پارٹنرشپ توڑی بلکہ ٹیم کو بڑی کامیابی بھی دلائی، وہ 36 رنز بنا سکے۔

253 کے اسکورپرانگلش ٹیم کو اس وقت بڑا دھچکا لگا جب جوزبٹلر1 رن بنا کر رن آئوٹ ہو گئے، کرس ووکس بھی1 رن بنا کر ہیزلووڈ کی گیند کا نشانہ بن گئے، 286 کے اسکور پرانگلینڈ کی یکے بعد دیگرے 2 وکٹیں گر گئیں اور میزبان ٹیم پر دبائو مزید بڑھ گیا، جوفرا آرچر 15 اور سٹورٹ براڈ بغیر کوئی رن بنائے آئوٹ ہوئے۔

286 کے اسکور پر 9 وکٹیں گرنے کے بعد سٹوکس کینگروز بائولرز کے سامنے چٹان بن گئے، انہوں نے غیرمعمولی بلے بازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ڈٹ کر حریف بائولرز کا مقابلہ کیا اور 135 رنز کی ناقابل شکست اننگز کھیل کر آسٹریلیا کی جیت کی امیدوں پر پانی پھیر دیا، لیچ 1 رن بنا کر ناٹ آئوٹ رہے۔ہیزلووڈ نے 4، لیون نے 2، کمنز اور پیٹنسن نے ایک، ایک وکٹ لی۔

خیال رہے کہ یہ وہی بین سٹوکس ہیں جنہوں نے گزشتہ ماہ کرکٹ کی موجد ٹیم کو پہلی بارعالمی چیمپیئن بنوایا تھا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.