کراچی میں شدید گرمی،پارہ 40 ڈگری کو چھو گیا

شہر قائد اور سندھ کے ساحلی علاقوں میں شدید گرمی کی لہر تیسرے روز بھی جاری ہے جب کہ سمندری ہوائیں بند ہونے کی وجہ سے ہیٹ ویو کے اثرات نمایاں ہیں۔

درجہ حرارت دوپہر کے اوقات میں 40 ڈگری تک پہنچ گیا جبکہ زیادہ سےزیادہ درجہ حرارت41 ڈگری سینٹی گریڈ رہنے کا امکان ہے، سمندری ہوائیں منقطع اور ریگستانی خشک ہوائوں کا راج ہے۔

ہفتہ وار تعطیل ہونے کے باوجود دن کے اوقات میں سڑکوں پر ہُو کا عالم ہے۔ دوسری جانب بجلی کی غیر اعلانیہ بندش نے لوگوں کی پریشانیوں میں مزید اضافہ کردیا ہے جبکہ مہران ٹائون اور قریبی علاقوں میں صبح سے بجلی بند ہے۔

ماہرین موسمیات کا کہنا ہے کہ شدید گرمی اور سمندری ہواؤں کی بندش کی وجہ بحیرہ عرب میں موجود ہوا کا کم دباؤ ہے۔ گرمی کی شدت منگل تک برقرار رہے گی جس کے بعد سمندری ہوائیں بحال ہوجائیں گی تاہم ستمبرکا پورا مہینہ ہی گرم رہے گا۔

طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ شدید گرمی کے موسم میں پانی یا ٹھنڈے مشروب زیادہ سے زیادہ پیئیں، لوگ دن کے اوقات میں غیر ضروری طور پر باہر نہ نکلیں اور باہر نکلتے وقت اپنے آپ کو ڈھانپ لیں۔

دوسری جانب موسم کا حال بتانے والوں کا کہنا ہے بحیرہ عرب میں ہوا کا کم دباو ڈپریشن کی شکل اختیارکر چکا ہے، 18 سے 24 گھنٹوں کے دوران یہ طوفان بن جائے گا جس کا نام ہیکا رکھا جائیگا۔

محکمہ موسمیات کے مطابق طوفان کا رخ اومان کی جانب ہو گا۔ ہیکا طوفان سے پاکستان کے ساحل کو کوئی خطرہ نہیں جبکہ ماہی گیروں کوریڈ الرٹ جاری کر دیا گیا ہے کہ کھلے سمندر میں نہ جائیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.