پولیس کاطالبہ مصباح کے قاتل کو گرفتار کرنے کا دعویٰ

ایس ایس پی ایسٹ غلام اظفر نے کہاہے کہ ایم کیوایم لندن کے ٹارگٹ کلر کو گرفتارکرلیا گیاجو111 قتل کی وارداتوں میں ملوث ہے ، ملزم سرکاری عباسی شہید ہسپتال میں ملازم تھا اور اس کا نیٹ ورک بھی بے نقاب ہو گیاہے ۔

ایس ایس پی ایسٹ غلام اظفر کا کہناتھا کہ بے نقاب ہونے والے نیٹ ورک کے ملزمان کی گرفتاری کیلیے چھاپے مارے جارہے ہیں،اس گروہ کے خلاف 57 مقدمات اب تک سامنے آچکے ہیں۔

ایس ایس پی ایسٹ غلام اظفرمہیسر نے کہا کہ گرفتار ملزم سانحہ 12 مئی میں بھی ملوث ہے، کچھ عرصہ قبل اس نے اپنا حلیہ تبدیل کرلیا اور تبلیغ پر چلا گیا تھا۔

ایس ایس پی ایسٹ کا کہنا تھا کہ ڈکیتی میں مزاحمت پر قتل ہونے والی طالبہ مصباح کے قتل میں ملوث ایک ملزم کو گرفتار کرلیا ہے، اس واقعے میں کچرا چننے والے افغانی جرائم پیشہ ملوث ہیں۔

پولیس نے بتایا کہ گرفتار ملزم نے اپنے ساتھی بشیرافغانی سمیت واردات کی تھی، واردات کے دوران چھینا گیا موبائل فون بھی برآمد کرلیا گیا ہے۔

مفرور ملزم کے ساتھی کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جارہے ہیں، یہ افغانی گینگ ہے جس نے کچرا چننے سے اپنا کام شروع کیا اور ڈکیتیاں شروع کردیں،کراچی میں کچراچننے والے افغانی ریکی کرکے وارداتیں کرتے ہیں۔

واضع رہے کہ  ایک ہفتہ قبل قبل گلشن اقبال میں لوٹ مار کے دوران مزاحمت پر فائرنگ کرکے یونیورسٹی کی طالبہ  مصباح کو قتل کر دیا گیا تھا۔

مصباح اپنے والد کے ساتھ موچی موڑ کے قریب یونیورسٹی کی بس کا انتطار کر رہی تھیں کہ اچانک موٹر سائیکل پر سوار دو ملزمان نے لوٹ مار کی کوشش کی اور مزاحمت کرنے پر فائرنگ کرکے فرار ہو گئے تھے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.