یہ 6 ماہ اور رہ گئے تو کوئی حکومت نہیں سنبھالےگا۔احسن اقبال

مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال کا کہنا ہے نواز شریف کو علاج کیلیے بیرون ملک جانے کی اجازت عمران خان کے بغض اورعناد کی شکست ہے، حکومت کو7 ارب کا بانڈ وصول کرتے کرتے 50 روپے کے اسٹام پیپر پراکتفا کرنا پڑا۔

نارووال میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ پاکستان آج عمران نیازی کی لگائی ہوئی نفرت کی آگ میں جل رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ نواز شریف کی کردار کشی کی گئی جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔ یہ حکومت نااہلی کی اعلیٰ مثال بن چکی ہے۔

احسن اقبال نے کہاکہ اب تو حکومتی اتحادیوں نے بھی کہہ دیا کہ عمران خان کی حکومت 6 ماہ اور رہ گئی تو کوئی حکومت سنبھال نہیں سکتا، اس لیے میں مطالبہ کرتا ہوں کہ عمران خان اپنی ناکامی تسلیم کریں اور فوری طورپرنئے انتخابات کا اعلان کریں۔

دوسری جانب مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے اٹارنی جنرل انور منصور اور مشیر احتساب شہزاد اکبر کی پریس کانفرنس اور وزیراعظم کے بیان پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ میاں نواز شریف کی سزا تمام کیسز میں معطل ہے۔اعلیٰ عدلیہ نے سزا معطلی کے فیصلہ میں تحریر کیا ہے کہ بادی النظر میں نواز شریف کو دی گئی سزا غلط ہے۔حکومت اپنی حد میں رہے عدالت نہ بنے،وزرا عدالتی فیصلے کی غلط تشریح و تعبیر کرکے ڈھٹائی اور بے شرمی کا مظاہرہ کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ عدالتی فیصلے میں یہ بھی لکھا ہے کہ جس شخص کی سزا اعلیٰ عدلیہ معطل کر چکی ہو،اس میں حکومت مداخلت کرکے کوئی شرط اوراس کا نام ای سی ایل میں نہیں ڈال سکتی۔

انہوں نے کہاکہ عدالت نے شرط نہیں لگائی تھی تو پھر حکومت نے عدالت بننے کی کوشش کیوں کی؟ حکومت نے عدالت کا اختیار استعمال کرنے کی ناکام کوشش کی ،اللہ تعالیٰ نے انکے ہاتھ میں کسی کیلیے خیر نہیں رکھی تو کم ازکم منہ ہی بند کرلیں تاکہ مزید رسوائی سے بچ سکیں۔ انہوں نے کہاکہ کابینہ کو غور کرنا چاہیے کہ وزیراعظم کی نالائقی اور نااہلی کا کیا علاج ہے؟

انہوں نے کہا کہ 22 کروڑ عوام کی دعاﺅں کے سائے میں منگل کو نواز شریف کو بیرون ملک علاج کے لیے الوداع کہیں گے۔ انشااللہ نواز شریف کے صحت یاب ہونے کے بعد وطن واپسی پران کا شانداراستقبال کریں گے۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ نواز شریف کیلیے ائیر ایمبولینس منگل کو پہنچے گی اوراسی روز وہ بیرون ملک علاج کے لیے روانہ ہوں گے۔ڈاکٹرز نے نواز شریف کا تفصیلی معائنہ کیا ہے، اسٹیرائڈ کی ہائی ڈوز ز دینے کا عمل جاری ہے تاکہ پلیٹ لیٹس کی مقدار سفر کے قابل ہو سکے جب کہ ہائی بلڈ شوگر، ہارٹ اور دیگر طبی خطرات کو کم سے کم سطح پر لانے کے لیے بھی ادویات دی جا رہی ہیں۔

ادھر سابق وزیراعظم کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنا ن نے کہاہے کہ طبی طورپر مستحکم ہوتے ہی نوازشریف لندن کے لئے روانہ ہوجائیں گے۔ میڈیکل ٹیم بھی ان کے ہمراہ ہو گی ،نواز شریف کا سفرانکی حالت بہتر ہونے سے مشروط ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.