سعودی اہلکار نے15امریکی فوجیوں کوگولیوں سے بھون ڈالا

امریکا میں نیول ایئربیس پر سعودی ایئرفورس کے اہلکار نے فائرنگ کرکے 3امریکی اہلکاروں کو ہلاک اور12 کو زخمی کردیا جوابی کارروائی میں حملہ آور بھی مارا گیا۔

امریکی میڈیا کے مطابق ریاست فلوریڈا کے شہر پنساکولا میں واقع نیول ایئربیس پرموجود سعودی ایئر فورس کے اہلکارنے فائرنگ کرکے تین افراد کو ماردیا جب کہ سیکیورٹی اہلکاروں کی جوابی فائرنگ سے حملہ آور بھی مارا گیا۔

نیول حکام کے مطابق حملہ آور سعودی شہری ہے جو امریکا اور سعودی عرب کے مشترکہ فوجی ٹریننگ پروگرام کے تحت فوجی تربیت کے لیے نیول ایئراسٹیشن پنساکولاِ میں موجود تھا۔

ملزم نے ایک کلاس روم میں اچانک فائر کھول دیا تو یہ واقعہ پیش آیا۔ فائرنگ سے 12 اہلکار زخمی بھی ہوئے جن میں ملزم پر جوابی فائرنگ کرنے والے دو ڈپٹی شیرف بھی شامل ہیں۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ سعودی شاہ سلمان نے انہیں فون کرکے گزشتہ روز امریکی نیول بیس پر پیش آنے والے واقعے پر شدید صدمے اورافسوس کا اظہارکیا ہے۔

سعودی عوام حملہ آور کے وحشیانہ اقدام پر سخت برہم ہیں اور یہ شخص کسی بھی صورت میں امریکی عوام سے محبت کرنے والے سعودی عوام کے جذبات کی ترجمانی نہیں کرتا۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اس واقعہ پر ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا کہ ‘سعودی عرب کے بادشاہ سلمان نے فلوریڈا کے شہر پنساکولا میں ہونے والے حملے میں ہلاک اور زخمی ہونے والے جوانوں کے اہل خانہ اور دوستوں سے تعزیت اور ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔

فلوریڈا کے گورنر نے تصدیق کی ہے کہ حملہ آور کا تعلق سعودی عرب سے تھا جس کی شناخت محمد سعید الشامرانی کے نام سے ہوئی ہے جو اس بحری اڈے پر تربیت حاصل کر رہا تھا۔
 واضح رہے کہ گزشتہ تین روز کے دوران امریکن نیوی پر فائرنگ کا یہ دوسرا واقعہ ہے۔ بدھ کو پرل ہاربر پر نیوی کے اہلکار نے اچانک امریکی محکمہ دفاع کے سویلین ملازمین پرگولیاں برسا کر خودکشی کرلی تھی جبکہ فائرنگ سے دو اہلکار مارے گئے اورایک زخمی ہوگیا تھا۔

تبصرے بند ہیں.