نیب نے وزیراعظم کے معاون خصوصی زلفی بخاری کو کلین چٹ دیدی

ایگزیکٹو بورڈ کے اجلاس میں بڑا فیصلہ کرتے ہوئے چیئرمیں نیب نے آف شور کمپنی کیس میں وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی زلفی بخاری کے خلاف کیس بند کرنے کی منظوری دیدی۔

نیب نے توشہ خانے سے تحائف کی گاڑیاں اونے پونے تقسیم کرنے کے الزام میں سابق صدر آصف زرداری سابق وزرائے اعظم نواز شریف اور یوسف رضا گیلانی کے خلاف ریفرنس دائرکرنے کی منظوری دیدی ہے۔

‏تفصیلات کے مطابق چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کے زیر صدارت ایگزیکٹو بورڈ کے اجلاس کا اعلامیہ جاری کر دیا گیا ہے۔ نیب نے سابق صدر زرداری اور سابق وزیراعظم نواز شریف اور یوسف رضا گیلانی کیخلاف ریفرنس کی منظوری دیتے ہوئے کہا ہے کہ توشہ خانہ گاڑیوں کے ریفرنس میں 2 سابق وزرائے اعظم اور سابق صدر ملزم کو نامزد کر دیا گیا ہے۔ ملزمان نے توشہ خانہ سے تحائف کی گاڑیاں اونے پونے داموں تقسیم کیں۔

خیال رہے کہ قومی احتساب بیورو (نیب) کی جانب سے توشہ خانہ کی گاڑیوں کے بارے میں نواز شریف اور یوسف رضا گیلانی سے پوچھ گچھ کی جا چکی ہے۔

دوسری جانب نیب ایگزیکٹو بورڈ کے اجلاس میں بڑا فیصلہ کرتے ہوئے آف شور کمپنی کیس میں وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی زلفی بخاری کے خلاف کیس بند کرنے کی منظوری دیدی ہے۔

ترجمان نیب کی جانب سے زلفی بخاری کے خلاف انکوائری بند ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ زلفی بخاری کے خلاف عدم شواہد کی بنیاد پرانکوائری بند کی گئی۔ نیب راولپنڈی کی جانب سے ان کے خلاف آف شور کمپنی کی تحقیقات کی گئی تھی۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.