مولانا فضل الرحمن نے پیپلزپارٹی اور ن لیگ سے منہ پھیرلیا

مولانا فضل الرحمن پیپلزپارٹی اور ن لیگ کے کردار سے مایوس ہوگئے، مستقبل کی حکمت عملی پر مشاورت کے عمل سے نکال دیا اوراپوزیشن کی دیگرسیاسی جماعتوں کوآج شام گھربلا لیا۔

مولانا فضل الرحمن کی زیر صدارت اجلاس میں محمود اچکزئی، حاصل بزنجو، آفتاب شیرپاؤ، پروفیسر ساجد میر اور مولانا اویس نورانی شریک ہوں گے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ مولانا فضل الرحمن آزادی مارچ، اے پی سیز اور آرمی ایکٹ کی حمایت کرنے پر پی پی اور ن لیگ کے کردار سے مایوس ہوئے ہیں۔

مولانا فضل الرحمن پی پی اور ن لیگ سے مشاورت کے حوالے سے بھی چھوٹی جماعتوں سے بات کریں گے جبکہ حکومت مخالف احتجاجی تحریک کے حوالے سے چھوٹی جماعتوں سے مشاورت کی جائے گی۔

تبصرے بند ہیں.