عمران خان کوایک نہیں،دو ٹیکے لگنے چاہئیں۔مریم اورنگزیب

مسلم لیگ (ن)کی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہاعمران صاحب کابینہ کے ’مس گائیڈ‘ (گمراہ) کرنے کا بیان اپنے ہی منہ پر طمانچہ ہے، ڈالر 120 سے 160 ہو گیا آپ کو ٹی وی سے پتہ چلا، گیس 250 فیصد اور بجلی 200 فیصد مہنگی ہو گئی آپ کو پتہ بھی نہیں چلا، آپ وزیراعظم ہیں آپ کو کوئی بتائے تو یاد آتا ہے؟، 16 ماہ میں تاریخی 11000 ارب کا قرض لیا اور کہتے ہیں وزرا ’مس گائیڈ‘ کر رہے ہیں؟۔ ایسے بیان دیتے ہوئے آپ کو شرم آنی چاہئیے۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران صاحب ڈاکٹروں کو کہیں آپ کو ایسا ٹیکا لگائیں جو آپ کا دماغ درست کرے، 16 ماہ میں 5.8 فیصد پہ ترقی کرتے ہوئے خوشحال ہنستے بستے ملک کو تباہ و برباد، بھوکا، غریب اور مہنگا ترین کردیا اورکہتے ہیں وزرا گمراہ کر رہے ہیں؟۔

انہوں نے کہاکہ 16 ماہ میں روزگار، کاروبار، معیشت، پولیو، ڈینگی، آٹا، چینی، ریلوے، صحت، تعلیم، منصوبہ بندی، گیس بجلی ہر شعبہ تباہ کر دیا اور کہتے ہیں کابینہ ’مس گائیڈ‘ کرتی ہے؟‎ عمران صاحب آپ جو باتیں کر رہے ہیں، اس کے بعد آپ کو ایک نہیں دو ٹیکے لگنے چاہئیں۔

ترجمان مسلم لیگ (ن) نے کہا پورا پاکستان جانتا ہے کہ آٹے، چینی کے بحران کے ذمہ دارخسرو بختیار اور جہانگیر ترین ہیں جنہیں آپ نے مسئلہ حل کرنے کا ذمہ دار بنایا، عمران صاحب کوئی ایسا ٹیکا لگوائیں جو آپ کا دماغ ٹھکانے پر لے آئے۔

یاد رہے کہ عمران خان نے بیان جاری کرتے ہوئے کہا تھا کہ 2013 میں جب وہ سیڑھی سے گرکر زخمی ہوئے تو شوکت خانم ہسپتال کے ڈاکٹرعاصم نے ایسا ٹیکا لگایا کہ درد دورہو گیااورٹیکا لگنے کے بعد انہیں نرسیں حوریں نظرآنے لگیں۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ میں نے تقریر بھی کردی جو مجھے یاد نہیں، درد دوبارہ ہونے لگا تو ڈاکٹر سے کہا ایک ٹیکا اورلگائوں۔وزیراعظم نے بتایا کہ انہوں نے ڈاکٹرکودھمکی بھی دی کہ ٹیکا لگائو ورنہ تمھیں چھوڑوں گا نہیں مگرڈاکٹر نے ٹیکا نہیں لگایا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.