شام کی سرکاری افواج کی بمباری سے20 شہری ہلاک

شام کی مرکزی شاہراہ کے تسلط کے لیے اتحادی افواج اور داعش جنگجوؤں کے درمیان جھڑپ میں 20 شہری ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق شام کی حلب کو دمشق اوراردن کی سرحد سے ملانے والی مرکزی شاہراہ ایم-5 سے عسکریت پسندوں کا قبضہ واگزارکرانے کے لیے اتحادی افواج  نے فضائی کارروائی کی جس کے دوران انہیں داعش جنگجوؤں کی جانب سے سخت مزاحمت کا سامنا رہا۔

فضائی بمباری کی زد میں آکر بچوں سمیت 20 شہری لقمہ اجل بن گئے جب کہ درجن سے زائد زخمی ہیں۔ کامیاب فضائی کارروائی کے بعد بشارالاسد حکومت نے مرکزی شاہراہ کا کنٹرول سنبھال لیا ہے اس طرح جنگ کے آخری میدان ’حلب‘ کا ملک کے دیگرعلاقوں سے رابطہ بحال ہوگیا ہے۔

واضح رہے کہ شام میں داعش کے آخری ٹھکانے ادلب میں دسمبر سے جاری  فضائی کارروائی میں 300 شہری ہلاک ہوئے اور5 لاکھ سے زائد افراد کو نقل مکانی کرنا پڑی ہے جب کہ 6 سال سے جاری جنگ کے باعث بھوک اورافلاس نے ملک میں ڈیرے ڈال دیے ہیں، انفرااسٹریکچر تباہ اورلاکھوں افراد پناہ گزین کیمپوں میں رہنے پر مجبور ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.