کرونا کا علاج۔ بھارت میں گائے کا پیشاب 500 روپے فی لٹر فروخت

بھارت میں ہندو مہاسبھا کی جانب سے دعوی کیے جانے پر کہ گائے کا پیشاب و گوبراستعمال کرنے والے شخص کوکرونا وائرس نہیں ہوتا جب سے باضابطہ گائے کا پیشاب و گوبر فروخت ہونے کی اطلاع موصول ہورہی ہیں او روہ بھی بھاری رقم میں فروخت کی جارہی ہے۔

کلکتہ میں گائے کا پیشاب 500 روپے فی لٹر فروخت کیا جارہاہے یہ واقعہ کلکتہ سے 20 کلو میٹر دورایک گاؤں میں پیش آیا جہاں ایک  شخص  گائے کا پیشاب بھاری رقم کے عوض فروخت کررہا ہے۔

بھارتی خبررساں ایجنسی کے مطابق معبود علی نیشنل ہائی وے پرایک ٹیبل پرگائے کا گوبرکا پیکٹ اورایک بڑے برتن میں گائے کا پیشاب فروخت کررہا ہے۔

اس ٹیبل پرایک تحریر بھی آویزاں ہے کہ”گائے کا پیشاب پیو اورکرونا وائرس سے محفوظ رہو” لکھا ہوا ہے۔ معبود علی نے بتایا کہ میرے پاس د گائیں ہیں۔ دودھ بیچ کر میں اپنا پیٹ پالتا ہوں۔

کچھ دن قبل ٹی وی کے ذریعے گاؤ متر پارٹی کے بارے میں پتہ چلا، مجھے لگا کہ میں بھی اب گائے کا گوبراواپیشاب فروخت کرکے زیادہ پیسہ کما سکوں گا اس کے بعد میں نے یہ کاروبار شروع کردیا۔ilyhunt

تبصرے بند ہیں.