سابق صدر پر ویڈیو لنک کے ذریعے فردجرم عائد کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد کی احتساب عدالت نے سابق صدر کے خلاف ویڈیو لنک پر فرد جرم عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ نجی ٹی وی کے مطابق آصف زرداری پر فرد جرم عائد کرنے کے لیے6 جولائی کی تاریخ مقررکی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد کی احتساب عدالت میں جعلی اکائونٹس کیس کی سماعت ہوئی جس میں آصف زرداری کے وکیل فاروق ایچ نائیک نے سابق صدرکی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست دائرکی۔

درخواست میں انہوں نے گزارش کی کہ  سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی عدالت میں پیش ہوئے تھے تو انہیں کورونا وائرس ہوگیا جبکہ آصف زرداری کے لیے ایک تو سفر کرنا مشکل ہے دوسرا ان کی عمر زیادہ ہے اس لیےانہیں  کورونا وائرس کا خطرہ بھی زیادہ ہے۔

درخواست پر مکالمہ کرتے ہوئےجج اعظم خان نےکہا کہ آپ بھی پیش ہورہے ہیں کیا آپ کو زندگی پیاری نہیں، جب آپ پیش ہورہے ہیں تو آصف علی زرداری کو بھی بلا لیں، زیادہ مسئلہ ہے توآصف زرداری کو الگ بلا کر ان سے دستخط لے لیتے ہیں۔

بعد ازاں عدالت نے آصف زرداری کی غیرحاضری کے باعث ان پر فرد جرم عائد نہیں کی اور 6 جولائی کو ویڈیو لنک کے ذریعے فرد جرم عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

احتساب عدالت نے پارک لین ریفرنس میں نامزد ملزمان کو بھی فرد جرم عائد کرنے کے لیے طلب کرلیا جب کہ نیب کو فرد جرم عائد کرنے کے لیے انتظامات مکمل کرنے کی ہدایت کی ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.