سابق وزیراعظم راجہ پرویزاشرف ایک اور ریفرنس میں بری

سابق وزیراعظم راجہ پرویزاشرف ایک اور ریفرنس میں بری ہوگئے ۔

احتساب عدالت اسلام آباد کے جج محمد بشیر نے کیس کا محفوظ فیصلہ سنایا۔ احتساب عدالت اسلام آباد نے راجہ پرویز اشرف کو پیراں غائب رینٹل پاور کیس میں بھی بری کردیا ہے۔ پیراں غائب ریفرنس میں راجہ پرویزاشرف سمیت 8ملزمان نامزد ہیں۔

دیگر ملزمان میں سابق مشیر خزانہ شوکت ترین، اسماعیل قریشی اورشاہدرفیع، طاہر بشارت چیمہ، سلیم عارف، چوہدری عبدالقدیر، اقبال علی شاہ کو بھی بری کر دیا گیا ہے۔

پیراں غائب ریفرنس نیب راولپنڈی کی جانب سے 2014 میں دائر کیا گیا تھا۔ 192میگا واٹ کا رینٹل پاور پلانٹ ملتان کے علاقے پیراں غائب میں لگایا گیا تھا۔

پرویز اشرف پر بطور وزیر پانی و بجلی کرپشن اور اختیارات کےغیر قانونی استعمال کا الزام تھا۔ راجہ پرویز اشرف کو سہووال ریفرنس میں گزشتہ ہفتے بری کیا گیا تھا۔

نیب کا رینٹل پاور کرپشن کیس کا فیصلہ چیلنج کرنے کا اعلان 

قومی احتساب بیورو نے رینٹل پاور کرپشن کیس کا فیصلہ چیلنج کرنے کا اعلان کر دیا۔

نیب اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ راجہ پرویز اشرف سمیت تمام ملزمان کی بریت کو چیلنج کریں گے، راجہ پرویز اشرف سمیت تمام ملزمان کے خلاف شواہد موجود ہیں، ملزمان کی بریت کا حکم کالعدم قرار دیا جائے، پیراں غائب ریفرنس میں عدالت کے فیصلے کے خلاف اپیل کریں گے۔

خیال رہے اسلام آباد کی احتساب عدالت نے رینٹل پاور ریفرنس میں سابق وزیرِ اعظم اور پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما راجہ پرویز اشرف کی درخواست منظور کی۔ عدالت نے ساہیوال ریفرنس میں 10 ملزمان کو بری کیا۔ ملزمان پر اختیارات کے غلط استعمال کا الزام تھا، ملزمان نے نیب ترمیمی آرڈی نینس کے تحت بریت کی درخواستیں دائرکی تھیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.