تھپڑ کس نے اور کیوں مارا ؟ مفتی قوی کا نیا انکشاف

ٹک ٹاک گرل حریم شاہ سے تھپڑ کھانے کے حوالے سے معروف عالم دین اور رویت ہلال کمیٹی کے سابق رکن مفتی عبدالقوی نےنیا انکشاف کیا ہے۔
اپنے بیان میں مفتی قوی کا کہنا ہے کہ انہیں تھپڑ حریم شاہ کی سیکرٹری نے مارا ہے۔
مفتی قوی کے مطابق اس کا مقصد ویڈیو وائرل کراکے لاکھ دو لاکھ روپے کمانا تھا، وہ یہ معاملہ اللہ پر چھوڑتے ہیں۔
واضح رہے کہ گزشتہ روز مفتی عبدالقوی کو ایک خاتون کی جانب سے تھپڑ مارنے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھی جس کے بعد حریم شاہ نے اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ سے ویڈیو شیئر کرتے ہوئے مفتی قوی کو تھپڑ مارنے کی تصدیق کی تھی اورکہا تھا کہ انہوں نے ہی تھپڑ مارا ہے اور کیوں مارا ہے اس کا جواب جلد سب کو مل جائے گا۔
بعد ازاں حریم شاہ نے بتایا کہ مفتی قوی کو ٹی وی پروگرام میں کراچی مدعو کیا، ان کے سفری و رہائشی اخراجات میں نے برداشت کیے۔
حریم شاہ نے گزشتہ روز کے واقعے سے متعلق بتایا کہ مفتی قوی کو تھپٹر میری کزن نے مارا اور ویڈیو میں نے بنائی، مفتی قوی وقتاً فوقتاً مجھ سے نازیبا گفتگو کرتے رہتے تھے لیکن انہوں نے مجھے جسمانی طور پر ہراساں کیا تو انہیں جوتوں سے مارا، جو اس قسم کے کام کرتے ہیں انہیں اب سمجھدار ہوجانا چاہیے۔
ان کا کہنا تھا کہ میں ایسےلوگوں کوبےنقاب کرتی رہوں گی جو منافق ہیں اور عزت کا جھوٹا لبادہ اوڑھے ہوئے ہیں۔

تبصرے بند ہیں.