فردو س عاشق اعوان نے قادر مندو خیل کو تھپڑ مارنے کی وجہ بتا دی

مشیر اطلاعات پنجاب فردوس عاشق اعوان نے پاکستان پیپلزپارٹی کے رکن قومی اسمبلی قادر خان مندو خیل کو تھپڑدے مارا۔

تفصیلات کے مطابق دونوں رہنماؤں کے درمیان ایکسپریس نیوز کے اینکر پرسن جاوید چوہدری کے شو میں جھگڑا ہوا،اس دوران فروس عاشق اعوان نے قادر خان مندوخیل کا گریبان پکڑا اور انہیں تھپڑ دے مارا۔ا

مشیر اطلاعات پنجاب فردو س عاشق اعوان نے پیپلزپارٹی کے رکن قومی اسمبلی قادر مندو خیل کو نجی ٹی وی پروگرام کے دوران تھپڑ مارنے کی وجہ بیان کرتے ہوئے ویڈیو پیغام جاری کر دیا۔

فردو س عاشق اعوان کا کہناتھا کہ جاوید چوہدری کے پروگرام میں پیپلزپارٹی کے ایم این اے قادر مندو خیل نے مسلسل میرے خلاف فحش زبان استعمال کی،وقفے کے دوران مجھے اور میرے والد کو ننگی اورغلیظ گالیاں دیں ، جس طرح سے انہوں نے میرے مرحوم والد کے حوالے سے نازیبا کلمات ادا کیے اورنہ صرف ہراساں کیا بلکہ دھمکیاں بھی دیں،ان کی بدکلامی اوربد زبانی کی وجہ سے مجھے اپنے دفاع میں یہ انتہائی قدم اٹھانا پڑا،کیونکہ میری سیاسی ساکھ اورعزت داﺅ پرلگی ،جو ویڈیو لیک ہوئی وہ منتخب ویڈیو لیک کی گئی ، میں چاہوں گی کہ یہ ساری ویڈیو لیک کی جائے تاکہ عوام تک حقائق پہنچے کہ اس نے کس طرح مجھے اس انتہائی قدم پر مجبور کیا، میں قانونی ماہرین سے مشاورت کے بعد یہ فیصلہ کروں گی کہ مجھے 62 اور63 کے تحت مندو خیل کے خلاف نہ صرف خواتین کو ہراساں کرنے بلکہ ہتک عزت کے تحت کیس سے متعلق اپنی ترجیحات طے کرنی ہیں اورقانونی چارہ جوئی بھی میرا حق ہے ۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز سوشل میڈیا پر ویڈیو وائرل ہوئی تھی جس میں فردوس عاشق اعوان اورقادر مندو خیل نجی ٹی وی کے پروگرام میں شریک تھے،اس دوران دونوں کے درمیان تلخ کلامی ہوئی اورفردوس عاشق اعوان نے پیپلزپارٹی کے رہنما کا گریبان پکڑلیا جس پرانہوں نے مشیر اطلاعات کا ہاتھ پکڑکر پیچھے کیا لیکن وہ پیچھے نہیں ہٹیں اورانہوں نے تھپڑ جڑدیا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.