سندھ ہائیکورٹ کا سرکاری نرخ پردودھ فروخت کرنے کا حکم

سندھ ہائیکورٹ نے دودھ کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے کے خلاف درخواست پر سرکاری قیمت پر فروخت یقینی بنانے کا حکم دے دیا۔

سندھ ہائیکورٹ میں دودھ کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے کے خلاف درخواستوں کی سماعت ہوئی۔ سندھ فورڈ اتھارٹی، کمشنر کراچی نے عمل درآمد رپورٹس جمع کرادیں جس میں کہا گیا ہے کہ اضافی قیمت پر دودھ بیچنے والوں کے خلاف کارروائی کر رہے ہیں اورکوشش کر رہے ہیں کہ دودھ سرکاری نرخ پر ہی فروخت ہو۔

عدالت نے دودھ کی سرکاری قیمت پر فروخت یقینی بنانے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ یہ کیس ریگولر بینچ سے متعلق ہے، مزید سماعت چھٹیوں کے بعد ہوگی جس کے بعد عدالت نے کیس کی سماعت 12 اگست کے لیے ملتوی کردی۔

عدالت میں دائر درخواست میں موقف اپنایا گیا تھا کہ شہر میں دودھ مافیا من پسند قیمت پردودھ فروخت کر رہی ہے، دودھ کی سرکاری قیمت 94 روپے فی کلو مقرر ہے، دودھ مافیا 130 اور 140 روپے فی کلو دودھ فروخت کر رہی ہے لہذا متعلقہ حکام کو دودھ کی سرکاری نرخ پر فروخت کو یقینی بنانے کا حکم دیا جائے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.