خیبرپختونخوا حکومت کا بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام سے علیحدگی کا اعلان

پشاور:خیبرپختونخوا حکومت نے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام سے علیحدگی کا اعلان کر دیا، جبکہ 1.4میٹرک ٹن گندم کی خریداری کی منظوری دیدی۔

خیبر پختونخوا کابینہ اجلاس کے بعد معاون خصوصی بیرسٹر محمد علی سیف کی کابینہ اجلاس کے بعد بریفنگ میں کہنا تھا کہ 1.4میٹرک ٹن گندم کی خریداری کی منظوری دی گئی ،گندم دو مرحلوں میں خریدی جائے گی،پاسکو سے بھی گندم خرید جائیگی ،ڈھائی ارب روپے سے زائد لاگت آئیگی،صوبے میں گندم کی کمی نہیں ہو گی۔

معاون خصوصی اطلاعات کا کہنا تھا کہ اشیائے خورونوش کی قیمتوں کو مدنظر رکھتےہوئے فوڈ کارڈ دینے کی منظوری دی گئی 65 لاکھ سے زائد گھرانوں کو سبسڈی پرفوڈ کارڈ دیا جائے گا جس پر 26 ارب روپے کی لاگت آئے گی،10 لاکھ خاندان کو فوڈ سیکیورٹی کارڈ دیا جائے گا،ہر گھرانے کو 35 کلو گرام آٹا ماہانہ دیا جائے گا یا 21 سو روپے کارڈ کے ذریعے دیے جائیں گے،قبائیلی اضلاع سے ٹی ڈی پی کو رقم دینے کا فیصلہ کیا گیا ،ٹیکسٹ بورڈ کی انتظامی پوسٹوں کی منظوری دی گئی ، صوبے میں 7ہزارمساجد کو سولرائز کرنے کی منظوری دی گئی۔