بھارتی فوج میں بھرتی نظام کیخلاف پرتشدد مظاہرے۔ متعدد ٹرینیں نذرآتش

نئی دہلی:بھارت میں فوج میں بھرتیوں کے نئے نظام پراحتجاجی مظاہرے شروع ہوگئے۔غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق بھارتی ریاستوں بہار، ہریانہ، مدھیہ پردیش میں مظاہرین نے متعدد  ٹرینوں کو نذرآتش کردیا۔

نجی ٹی وی کے مطابق بہار میں مظاہرین نے سرکاری عمارتوں میں داخل ہونے کی کوشش کی اوربہارکے شہرنوادا میں بی جے پی کا دفترنذرآتش کردیا۔ پولیس نے مظاہرین کو منتشرکرنے کیلیے آنسو گیس کی شیلنگ کی۔اطلاعات کے مطابق بہارکے ریلوے اسٹیشنزپرپولیس کی اضافی نفری تعینات کردی گئی ہے جبکہ کشیدگی کی وجہ سے دو درجن ٹرینیں منسوخ کردی گئی ہیں۔

ادھرہریانہ میں مظاہرین نے سرکاری اہلکاروں کے گھروں پر پتھراؤ کیا جس کے بعد پلوال ضلع میں موبائل اورانٹرنیٹ سروس معطل کردی گئی ہے۔رپورٹس کے مطابق بھارتی فوج میں بھرتی کے نئے نظام میں نوجوانوں کو صرف چار سال کیلیے فوج میں بھرتی کیا جائے گا، نئے نظام کے تحت نئے بھرتی ہونے والوں میں سے صرف ایک چوتھائی کو طویل مدت کیلیے فوج میں رکھا جائے گا۔

منگل کے روز بھارت نے’اگنی پتھ‘ پروگرام متعارف کرایا تھا جس کے تحت فوج میں بھرتی کے خواہش مند 17.5 سے 21 سال تک کے امیدواروں میں سے ٹیسٹ میں کامیاب ہونے والے نوجوانوں کو 4 سال کیلیے بھرتی کیا جائے گا جبکہ ان میں سے صرف 25 فیصد کو مستقل رکھا جائے گا۔