اناڑی طبی عملے نے نو زائیدہ کا سرتن سے جدا کردیا

مٹھی:تھرپارکرکے علاقے چھاچھرو کے مقامی صحت مرکزکے ناتجربہ کار طبی عملے نے حاملہ خاتون کا غلط آپریشن کر ڈالا جس کے نتیجے میں پیدا ہونے والے بچے کا سرتن سے جدا کر دیا۔

محکمہ صحت حکام کے مطابق اناڑی طبی عملے نے نوزائیدہ کوسرکاٹ کرماں کے پیٹ سےنکالا اور دھڑپیٹ میں چھوڑدیا، پھر انہیں چھاچھروسےسول اسپتال مٹھی بھیجاگیاجہاں اس حوالے سےکوئی سہولت میسر نہیں تھی۔

بعدازاں مٹھی سے52 سالہ حاملہ خاتون کوسول اسپتال حیدرآباد منتقل کیاگیا جہاں ڈاکٹرزنے آپریشن کرکے پیٹ سے بچے کا دھڑ نکال کر خاتون کی جان بچائی۔

ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ سندھ ڈاکٹرجمن کے مطابق اس اندوہناک واقعے کی تحقیقات کا حکم دےدیا گیا ہے۔ڈی جی ہیلتھ کا کہنا تھا کہ سفاکی میں ملوث افرادکےخلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔