ایل پی جی کی قیمت میں24 گھنٹے میں دوسری بار اضافہ

کراچی:ایل پی جی مارکیٹنگ کمپنیوں نے سپر ٹیکس کی آڑ میں 24 گھنٹوں کے دوران دوسری بار فی کلو ایل پی جی کی قیمت مزید 10روپے بڑھا دی۔

ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین عرفان کھوکھر کا کہنا ہے کہ ایل پی جی مارکیٹنگ کمپنیوں نے سپر ٹیکس کی آڑ میں مزید قیمتیں بڑھانے کے لیے گٹھ جوڑکرلیا اورایل پی جی کی ذخیرہ اندوزی شروع کر دی ہے۔

عرفان کھوکھر نے بتایا کہ یکم جولائی 2022 سے انٹر نیشنل مارکیٹ میں ایل پی جی کی قیمت میں کمی ہو رہی ہے لیکن مقامی سطح پر قیمتیں بڑھائی جا رہی ہیں۔

چیئرمین ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرز ایسوسی ایشن نے کہا کہ ایل پی جی کی قیمت میں مزید 10روپے فی کلو اضافہ بلاجواز ہے۔ انہوں نے وزیراعظم سے مطالبہ کیا کہ اوگرا کی مقرر کردہ قیمت سے زیادہ قیمت وصول کرنے والوں کے خلاف سخت اقدام کیا جائے۔

عرفان کھوکھرکے مطابق فی کلو ایل پی جی کی قیمت بڑھ کر 220 روپے فی کلو ہوگئی، گھریلوں سیلنڈر کی قیمت 106روپے فی کلو کے اضافے سے 2581روپے اورکمرشل سیلنڈرکی قیمت 408روپے فی کلو کے اضافے سے 9988روپے ہوگئی جبکہ گلگت بلتستان میں فی کلو ایل پی جی کی قیمت 270 روپے تک پہنچ گئی۔

واضع رہے کہ مافیا نے عیدالاضحیٰ کے موقع کا فائدہ اٹھانے کے لیے پیر کے روزایل پی جی کی مصنوعی قلت پیدا کرکے فی کلوگرام ایل پی جی کی قیمت 10روپے بڑھا دی تھی۔