سعودی عرب نے اپنا پہلا خلائی مشن 1985 میں بھیجا تھا۔فائل فوٹو
سعودی عرب نے اپنا پہلا خلائی مشن 1985 میں بھیجا تھا۔فائل فوٹو

سعودی عرب آئندہ سال پہلی خاتوں کو خلا میں بھیجے گا

رایض: سعودی عرب نے نیا خلائی پروگرام شروع کردیا۔ اس خلائی مشن میں پہلی بارایک خاتون کو2023 میں خلائی مشن پر روانہ کیا جائے گا۔ اس امرکا اعلان سعودی عرب کے سرکاری خبر رساں ادارے کے ذریعے کیا گیا۔
خبر رساں ادارے کے مطابق اس سعودی خلائی مشن کی مزید تفصیلات اگلے ماہ جاری کی جائیں گی۔سعودی عرب اپنے خلائی پروگرام کو ترقی دینے کے لیے کوشاں ہے جس طرح کہ متحدہ عرب امارات اپنا خلائی پروگرام ڈویلپ کرنے کی کوشش میں ہے۔ متحدہ عرب امارات آج کل ایک خاتون خلاباز نورالمتروشی کو مریخ پر بھیجنے کی تیاری کر رہا ہے۔
واضع رہے کہ سعودی عرب نے اپنا پہلا خلائی مشن 1985 میں بھیجا تھا۔ اس مشن کے تحت خلا میں جانے والے سعودی شاہی خاندان کے شہزادہ سلطان بن سلمان پہلےعرب ، پہلے مسلمان اورسعودی شاہی خاندان کے پہلے فرد کے  تھے۔

یہ بھی دیکھیں

ایران میں مظاہرین کی حمایت،سابق ایرانی صدر کی بیٹی گرفتار

فائزہ ہاشمی رفسنجانی کو مظاہروں کی حمایت پر تہران سے گرفتار کیا گیا، پولیس کی جانب سے ان پر فسادات کو ہوا دینےکا الزام عائدکیا گیا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔