دفتر خارجہ نے پاکستانی وفد کے اسرائیلی دورے کی تردید کر دی

اسلام آباد : دفتر خارجہ نے  پاکستان کے کسی وفد کے دورہ  اسرائیل سے متعلق خبروں کی تردید کر دید کر دی ہے۔
ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ آزاد و خود مختار فلسطینی ریاست کا قیام خطے میں انصاف اور دیرپا امن کے لیے ناگزیر ہے۔
ترجمان دفتر خارجہ عاصم افتخار احمد کی جانب سے جاری بیان کے مطابق پاکستان کے کسی وفد کے دورہ اسرائیل کا تاثر صریحاً مسترد کرتے ہیں۔
 ان کا کہنا تھا کہ غیرملکی غیرسرکاری تنظیم نے زیر بحث دورے کا اہتمام کیا جو پاکستان میں موجود نہیں، پاکستان کا مسئلہ فلسطین پر موقف واضح اور غیر مبہم ہے۔
ترجمان دفتر خارجہ کا یہ بھی کہنا تھا کہ پاکستان کی پالیسی میں ایسی کوئی تبدیلی نہیں جس پر مکمل قومی اتفاق رائے ہو، پاکستان فلسطینی عوام کے ناقابل تنسیخ حق خودارادیت کی مستقل حمایت کرتا ہے۔
عاصم افتخار احمد نے کہا کہ پاکستان، مسئلہ فلسطین کا اقوام متحدہ، او آئی سی قراردادوں کے مطابق حل چاہتا ہے۔
 انہوں نے یہ بھی کہا کہ ایسی فلسطینی ریاست کے حامی ہیں جس کا دارالحکومت القدس الشریف ہو، آزاد و خود مختار فلسطینی ریاست کا قیام خطے میں انصاف اور دیرپا امن کے لیے ناگزیر ہے۔
ترجمان دفتر خارجہ عاصم افتخار احمد نے مزید کہا کہ اقوام متحدہ، او آئی سی قراردادوں کے مطابق 1967 سے قبل کی سرحدوں کے ساتھ آزاد فلسطینی ریاست قائم کی جائے۔
خیال رہےکہ 2 روز قبل اسرائیلی میڈیا نے دعویٰ کیا تھا کہ  امریکا میں مقیم پاکستانیوں کا ایک وفد اسرائیل پہنچا ہے جو کہ اسرائیلی صدر  سے ملاقات بھی کرےگا۔

یہ بھی دیکھیں

کراچی، گیس لیکج آتشزدگی سے گھر کے 5 افراد جھلس گئے

گھر میں گیس لیکیج کا واقعہ لیاری میراں ناکا محمدی مسجد کے قریب پیش آیا جس کے نتیجے میں ایک ہی خاندان کے 5 افراد جھلس کر زخمی ہو گئے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔