غزہ: اسرائیلی بمباری میں اسماعیل ہنیہ کابیٹاشہید

غزہ (امت نیوز) غزہ میں حماس کے سیاسی بیورو کے سربراہ اسماعیل ہنیہ کے بیٹے حازم ہنیہ اسرائیلی فوج کے فضائی حملے میں شہید ہوگئے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق اسرائیلی حکومت سے تعلق رکھنے والے معروف سوشل میڈیا اکائونٹس سے اطلاع دی گئی کہ حازم اسماعیل ہنیہ کو شہید کر دیا گیا۔مقامی فلسطینی میڈیا نےسوشل میڈیا دعوے کی بنیاد پر کہاصیہونی حکومت کے لڑاکا طیاروں نے غزہ میں ایک گھر کو نشانہ بنایا جس سے عمارت مکمل طور پر تبا ہوگئی،ممکنہ طور پر عمارت میں اسماعیل ہنیہ کے خاندان کے کچھ افراد مقیم تھے،حملے میں حازم ہنیہ کی شہادت کی غیر مصدقہ اطلاع ہے۔

حماس نے بھی خبروں کی تردید یا تصدیق کی نہ ہی اسماعیل ہنیہ کا کوئی بیان منظر عام پر آیاہے جو اس وقت کسی نامعلوم پر مقیم ہیں۔فلسطینی میڈیا کے مطابق حازم ہنیہ کی عمر22 سال اور وہ کالج کے طالبعلم تھے، 7 اکتوبر سے شروع ہونے والی غزہ جنگ میں حماس رہنما اسماعیل ہنیہ کے خاندان کے 14 افراد شہید ہوچکے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔