کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ جی ڈی پی کے اعشاریہ 5 سے ڈیڑھ فیصد تک رہنے کی توقع ہے، فائل فوٹو
کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ جی ڈی پی کے اعشاریہ 5 سے ڈیڑھ فیصد تک رہنے کی توقع ہے، فائل فوٹو

جولائی سے دسمبر 2023کے دوران معاشی حالات بہتر ہوئے، اسٹیٹ بینک

کراچی: اسٹیٹ بینک نے رواں مالی سال کی پہلی ششماہی سے متعلق پاکستان کی معاشی رپورٹ جاری کردی، اسٹیٹ بینک کے مطابق جولائی سے دسمبر 2023 کے دوران معاشی حالات بہتر ہوئے، سخت زری اور مالیاتی پالیسیوں کے تسلسل سے کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں کمی آئی۔

اسٹیٹ بینک کی پاکستان کی معیشت کی کیفیت پر اجرفی ششماہی رپورٹ میں بتایاگیا ہے کہ آئی ایم ایف کے ساتھ عارضی انتظام نے بیرونی کھاتےپردباؤ کم کرنےمیں مدد دی ، رواں مالی سال پہلی ششماہی کے دوران معاشی حالات بہتر ہوئے ہیں ، ملکی طلب محدود رہنے کے باوجود مہنگائی بلند رہی، جاری کھاتےکےخسارے میں کمی سے زرمبادلہ کےذخائر میں اضافہ ہوا۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ رواں مالی سال معاشی ترقی کی شرح 2 سے 3 فیصد رہنے کی توقع ہے، ستمبر 2025 تک مہنگائی کم ہوکر 5 سے 7 فیصد تک آنے کی توقع ہے، کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ سابقہ تخمینوں سے کم رہنے کا امکان ہے، کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ جی ڈی پی کے اعشاریہ 5 سے ڈیڑھ فیصد تک رہنے کی توقع ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔