روسی وزارت دفاع کے سینئر افسر رشوت لینے کے الزام میں گرفتار

روس (اُمت نیوز)روسی وزارت دفاع کے ایک اور سینئر افسر کو رشوت لینے کے الزام میں گرفتار کرلیا گیا ہے، لیفٹیننٹ جنرل یوری کزنیتسوف (Yuri Kuznetsov) ایک ماہ کے دوران دوسرے بڑے افسر ہیں جنہیں اس الزام کا سامنا ہوا ہے۔

گرفتار جنرل یوری کزنیتسوف وزارت دفاع میں مرکزی پرسنل ڈائریکٹوریٹ کے سربراہ تھے، ان پر سن دو ہزار21 سے سن دو ہزار 23 کے درمیانی عرصے میں 30 ملین روبل سے زیادہ رشوت لینے کا الزام ہے۔

اس وقت وہ جنرل اسٹاف کی جس ڈائریکٹوریٹ کےسربراہ تھے جو ٹیکنیکل انفارمیشن سیکیورٹی سے متعلق ہے۔

چھاپے کےدوران ان کے قبضے سے سو ملین روبل، سونے کے سکے، مہنگی گھڑیاں اور دیگر لگژری اشیا برآمد کی گئیں۔

حکام کا کہنا ہےکہ کزنیتسوف کی گرفتاری کا نائب وزیر دفاع تیمور ایوانوف کی گرفتاری سے تعلق نہیں ہے۔

واضح رہے کہ کزنیتسوف کو پندرہ برس قید کا سامنا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔