این اے 46 دھاندلی کیس،ریٹرننگ افسر کو فارم 45، 46، 47 جمع کرانے کا حکم

اسلام آباد(اُمت نیوز)ہائی کورٹ نے این اے 46 دھاندلی کیس میں ریٹرننگ افسر کو فارم 45، 46، 47 جمع کرانے کا حکم دیا ہے۔

الیکشن ٹریبونل جسٹس طارق محمود جہانگیری کے روبرو اسلام آباد کے حلقہ این اے 46 میں مبینہ دھاندلی کے خلاف پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ امیدوار عامر مغل کی اپیل پر سماعت ہوئی، جس میں لیگی ایم این اے انجم عقیل خان اپنے وکیل کے ساتھ پیش ہوئے۔

دوران سماعت وکیل الیکشن کمیشن نے عدالت کو بتایا کہ پٹیشنز کی کاپیز نہیں ملیں، ہم نے فارم 45، 46، 47 جمع کرا دیے ہیں، جس پر عدالت نے الیکشن کمیشن کو کاپیز کی فراہم کرنے کے لیے پٹیشنر کو ہدایت کردی۔ ریٹرننگ افسر کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ مجھے گزشتہ روز پارٹی بنایا گیا ہے، کچھ وقت دے دیں جواب دے دوں گا ، جس پر عدالت نے ریٹرننگ افسر کو فارم 45 ، 46 ، 47 جمع کرانے کا حکم دے دیا۔

لیگی ایم این اے انجم عقیل خان کی جانب سے عدالت میں درخواست دائر کردی گئی، جس میں مؤقف اختیار کیاگیا کہ عامر مغل کی درخواست قابل سماعت نہیں کیونکہ تقاضے پورے نہیں کیے گئے۔ عدالت کی انجم عقیل خان کی درخواست پر عامر مغل کے وکیل کو جواب دینے کی ہدایت کی۔

الیکشن ٹریبونل نے استفسار کیا کہ انجم عقیل خان کی جیت کا گزٹ نوٹیفکیشن کب کا ہے ؟، جس پر عامر مغل کے وکیل نے بتایا کہ 19 فروری کا نوٹیفکیشن ہے جب کہ الیکشن کمیشن کے وکیل نے بتایا کہ 13 فروری کا نوٹیفکیشن ہے۔ عامر مغل کی پٹیشن وقت گزرنے کے بعد دائر ہوئی ہے۔

جسٹس طارق محمود جہانگیری نے ریمارکس دیے کہ قانون کے مطابق دیکھیں گے جو بھی ہوا فیصلہ کریں گے۔ بعد ازاں عدالت نے کیس کی مزید سماعت ملتوی کردی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔