پاکستان میں ڈالرکو بھی کرونا وائرس لگ گیا

انٹر بینک میں پاکستانی کرنسی کی بے قدری کا سلسلہ جاری ہے اورڈالر ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر جا پہنچا ہے۔

کرونا کی وبا نے جہاں پاکستان کی اسٹاک مارکیٹ کو شدید نقصان پہنچایا ہے وہیں امریکی ڈالرکی ذخیرہ اندوزی بھی شروع ہوگئی ہے جس کے باعث امریکی ڈالرکے مقابلے می پاکستانی کرنسی تاریخ کی کم ترین سطح پرجاپہنچی ہے۔

جمعے کے روزانٹر بینک میں روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالرکی قدر میں مزید ایک روپے 87 پیسے بڑھ گئی جس کے بعد ڈالرکی قدر ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح 168 روپے تک جاپہنچا ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ 4 روزکے دوران امریکی ڈالرکی قدر میں 8 روپے 20 پیسے اضافہ ہوا ہے جس سے غیرملکی قرضہ 800 ارب روپے بڑھ گئے ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.