نیوزی لینڈ نے بھارت کا غرور خاک میں ملا دیا

نیوزی لینڈ بھارت کو18رنز سے ہراکر کرکٹ ورلڈ کپ 2019 کے فائنل میں پہنچ گیا۔

کرکٹ ورلڈکپ 2019 کے پہلے سیمی فائنل میں بھارتی ٹیم 221رنز پر ڈھیر ہو گئی،سیمی فائنل میں شکست کے بعد بھارت کے طول و عرض میں صف ماتم بچھ گئی جبکہ پاکستنانیوں کے چہرے خوشی سے کھل اٹھے،پاکستانی شائقین نے کھل کر نیوزی لینڈ کی حمایت کی۔

پاکستانیوں شیریوں کا کہناتھا کہ بھارت انگلینڈ کیخلاف میچ میں جان بوجھ کر ہارا تھا،اس کا مقصد پاکستان کوسیمی فائنل سے باہرکرناتھا۔

نیوزی لینڈ بھارت کو 18رنز سےشکست دے کر ورلڈکپ کے فائنل میں پہنچ گیا ہے، نیوزی لینڈ نے بھارت کی جیت کے لیے 240 رنز کا ہدف دیا جس کے جواب میں بھارتی کی جانب سے اننگز کا آغاز روہت شرما اور لوکیش راہول نے کیا تاہم بھارتی ٹاپ آرڈر نیوزی لینڈ کے بولرز کے سامنے بے بس دکھائی دیا اور صرف 5 رنز پر 3 بیٹسمین پولین لوٹ گئے، روہت شرما، لوکیش راہول اور ویرات کوہلی نے صرف ایک ایک رن بنایا اور آؤٹ ہوگئے۔

24 رنز پر 4 کھلاڑی آؤٹ ہونے کے بعد رشپ پنٹ اور ہاردیک پانڈیا نے ٹیم کا اسکور آگے بڑھایا، دونوں کے درمیان 47 رنز کی شراکت قائم ہوئی تاہم رشپ پنٹ 32 رنز بناکر آؤٹ ہوگئے۔

ساتویں وکٹ کی شراکت میں مہیندرا سنگھ دھونی اور رویندرا جڈیجا کے درمیان 116 رنز کی شراکت قائم ہوئی، رویندرا جڈیجا نے جارحانہ کھیل کا مظاہرہ کیا اور 77 رنز بنائے تاہم چھکا مارنے کی کوشش میں وہ کیچ آؤٹ ہوگئے جب کہ اگلے ہی اوور میں دھونی 50 رن بناکر رن آؤٹ ہوگئے۔

بھونیشور کمار بغیر کوئی بنائے پویلین لوٹ گئے جبکہ چاہل 5رنز کے مہمان بنےمیٹ ہنری کومین آف دی میچ قرار دیا گیا۔

بھارتی ٹیم مقررہ 49.3 اوورز میں 221 رنز ہی بناسکی، نیوزی لینڈ کی جانب سے میٹ ہنری نے 3، ٹرینٹ بولٹ اور مچل سانٹنر نے 2،2 وکٹیں حاصل کیں۔

اس سے قبل آج جب نیوزی لینڈ نے اپنی نامکمل اننگز 211 رنز 5 وکٹوں کے نقصان پر شروع کی تو صرف 15 رنز کے اضافے کے بعد راس ٹیلر رن آؤٹ ہوگئے جب کہ اگلی ہی گیند پر ٹام لیٹھم بھی کیچ آؤٹ ہوگئے۔

آخری 4 اوورز میں نیوزی لینڈ کی ٹیم کچھ خاص کارکردگی کا مظاہرہ نہ کرسکی اور مقررہ 50 اوورز میں 8 وکٹوں کے نقصان پر صرف 239 رنز ہی بناسکی۔ نیوزی لینڈ کی جانب سے راس ٹیلر نے 74 اور کپتان کین ولیمسن نے 67 رنز کی اننگز کھیلی۔

گزشتہ روز نیوزی لینڈ نے ٹاس جیت کر بیٹنگ کا فیصلہ کیا تو اننگز کا آغاز مارٹن گپٹل اور ہینری نکولس نے کیا تاہم مارٹن گپٹل صرف ایک رن بناکر آؤٹ ہوگئے، دوسری وکٹ پر کپتان ولیمسن نے نکولس نے محتاط بیٹنگ کرتے ہوئے اننگز کو آگے بڑھایا  تو 69 کے مجموعے پر نکولس  بولڈ ہوگئے، کپتان نے تجربہ کار راس ٹیلر کے ساتھ تیسری وکٹ پر 65 رنز جوڑ ے، اس دوران ولیمسن نے نصف سنچری اسکور کی تاہم وہ  134 کے مجموعی اسکور پر کیچ آؤٹ ہوگئے، ولیمسن نے 95 گیندوں پر 67 رنز بنائے جس میں 6 چوکے بھی شامل تھے۔

نیوزی لینڈ کی چوتھی وکٹ 162 رنز  پرجیمس نیشن کی صورت میں گری جو تجربہ کار راس ٹیلر کا ساتھ  چھوڑ گئے، انہوں نے صرف 12 رنز بنائے جب کہ گرینڈ ہوم 16 رنز بنا کر کیچ آؤٹ ہوگئے تاہم 46 عشاریہ ایک اوورز میں تیز بارش کی وجہ سے میچ روک دیا گیا تھا، کیوی ٹیم نے 46 اعشاریہ ایک اوورز میں 5 وکٹوں پر 211 رنز بنائے تھے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.