دو نوجوان سمندرکی بے رحم موجوں کی نذرگئے

کراچی: سی ویو پرپکنک مناتے دو نوجوان سمندرکی بے رحم موجوں کی نذرگئے، 22 سالہ شہزاد کی لاش مل گئی، دانیال کی تلاش جاری ہے، ساحل پر لاپتہ ہونے والے تینوں بچوں کو تلاش کرلیا گیا جنہیں ورثا کے حوالے کر دیا گیا ہے۔

 عید پرافسوس ناک واقعہ سمندر میں نہانے کی کھلی آزادی کے سبب پیش آیا، سی ویو پر پکنک منانے کیلیے آنے والے دو لڑکے سمندر میں نہاتے ہوئے ڈوب گئے۔ کئی گھنٹے کی جہدوجہد کے بعد فلاحی اداروں کے غوطہ خوروں نے بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب شہزاد سونو نامی لڑکے کی لاش نکال لی، ڈوبنے والے دوسرے لڑکے دانیال کی تلاش میں غوطہ خوروں کو کامیابی نہ مل سکی۔

ورثا کا کہنا ہے کہ عید کے دوسرے روز پپری کے علاقے سے پکنک منانے کیلیے سی وی او آئے تھے۔ بدھ کی دوپہر دونوں لڑکوں کے ڈوبنے کی پولیس کو اطلاع دی مگر کسی نے مدد نہیں کی۔ پولیس کے مطابق ڈوبنے والے دونوں لڑکوں کا تعلق پپری سے ہے، شہزاد سونو دو بھائیوں میں بڑا اور کباڑ کا کام کرتا تھا۔ ڈوبنے والے دوسرے لڑکے کی تلاش کرنے کیلئے ریسیکیو آپریشن جاری ہے۔