عمران خان کا25 مئی کو اسلام آباد لانگ مارچ کا اعلان

پشاور: پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی نے 25 مئی کو اسلام آباد کی طرف لانگ مارچ کرنے کا اعلان کر دیا۔ کارکنا ن اپنی تیاری پوری رکھیں ، حکومت نے رکاوٹیں ڈالنی ہے۔ انہوں نے کہا کہ فوج سے کہتا ہوں کہ اس معاملے میں اپنے آپ کو نیوٹرل رکھیں۔

 پریس کانفرنس کرتے ہوئے عمران خان نے کہا  کہ 25 مئی کو اسلام آباد کی طرف لانگ مارچ کریں گے، 25مئی کو تین بجے کشمیر ہائی وے پر ملوں گا،تاہم انہوں نے یہ نہیں کہا کہ لانگ مارچ کتنے دن کا ہو گا،اسمبلی تحلیل کریں اورنئے الیکشن کی تاریخ کا اعلان کیاجائے۔ سازش میرے نہیں ،پاکستان کے عوام کیخلاف ہوئی۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کیخلاف بیرونی سازش امریکا سے ہوئی، رجیم چینج کیلیے انہوں نے کرپٹ لوگوں کو اپنے ساتھ ملایا، گزشتہ 8 ماہ سے یہ سازش شروع ہوئی، امریکا نےملک کےکرپٹ ترین لوگوں کو ساتھ ملایا، اس سازش کا علم گزشتہ جون سے ہی تھا، کوشش کرتے رہے کہ یہ سازش کامیاب نہ ہو، بدقسمتی سے ہم اس سازش کو نہیں روک سکے، 7مارچ کو امریکی انڈر سیکریٹری نے ہمارے سفیر کو دھمکی دی، ڈونلڈ لو نے کہا اگر عمران خان کو نہیں ہٹاؤ گے تو پاکستان کیلئے مسئلے ہوں گے ، یہ سازش میرےخلاف نہیں پاکستان کے خلاف ہوئی تھی۔

سابق وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ ہمارا جی ڈی پی گروتھ 6 فیصد پر تھا، ملک آگے بڑھ رہا تھا، 1960کی دہائی کے بعد پہلی بار ملک آگے بڑھ رہا تھا، ملک میں ریکارڈ فصلیں ہوئیں، کسانوں کو پیسہ ملا، آئی ٹی کی ایکسپورٹس پہلی دفعہ 75 فیصد تک بڑھیں، جب حکومت میں آئے تو پاکستان کا 20 ارب ڈالر کا بیرونی خسارہ تھا، ہم ملک کو مشکل حالات سے نکال رہے تھے کہ کورونا آگیا، ہم نے اپنے لوگوں اور معیشت کو کورونا سے بچایا، ہماری حکمت عملی کی دنیا مثال دیتی تھی۔

پی ٹی آئی چیئرمین نے حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اب پتہ چلا ان کاتجربہ صرف کرپشن کیسز ختم کرنے میں ہے، مہنگائی کی صورتحال تشویشناک ہے، بیرون ملک پاکستانیوں نے ریکارڈ پیسہ ملک میں بھیجا، ان کے پاس کوئی پلان یا روڈ میپ نہیں، اقتدار میں آنے والوں پر کیسز ہیں، مفرور باہر سے بیٹھ کر فیصلے کر رہا ہے، ایک بیرونی سازش سے ہمیں ہٹایا گیا، سازش میں یہاں کے میر صادق اور میر جعفر نے ساتھ دیا، کہا گیا کہ عمران خان کو ہٹا دیا تو معاف کردیا جائے گا، اقتدار میں آںے والوں پر کیسز ہیں، باہر سے سازش کرکے ہمارے ملک کی توہین کی گئی۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ اس ملک کے 22 کروڑ عوام کو ٹشو پیپر کی طرح استعمال کیا گیا، کہا گیا یہ وزیراعظم روس چلا گیا تھا، یہ ہمارا حکم نہیں مانتا تھا اسے نکالو، روس سے 30 فیصد کم قیمت پر تیل خریدنے کیلئے بات چیت کر رہے تھے۔

قبل ازیں  پاکستان تحریک انصاف کی کور کمیٹی کا اجلاس ختم ہوگیا ہے، جس میں لانگ مارچ کی حتمی تاریخ کا فیصلہ کرلیا گیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی نے 25 مئی کو اسلام آباد کی طرف لانگ مارچ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

عمران خان کی زیرصدارت پی ٹی آئی کور کمیٹی کا اجلاس وزیر اعلیٰ ہاؤس پشاور میں ہوا۔ جس میں اسد عمر، شاہ محمود قریشی، شبلی فراز، اسد قیصر، پرویز خٹک، شہباز گل، اعجاز چوہدری، سیف اللہ نیازی، علی امین گنڈاپور نے شرکت کی۔

اس کے علاوہ فواد چوہدری، حلیم عادل شیخ، شاہ فرمان، فیصل جاوید، وزیراعلیٰ محمودخان، فواد چوہدری، عامر کیانی، شاہ فرمان، بابراعوان بھی شریک تھے۔

وزیر اعلیٰ ہاؤس پشاور میں منعقدہ اجلاس میں شفقت محمود ،علی محمد خان، اعظم سواتی ،فرخ حبیب ،عثمان ڈار بھی موجود تھے۔