Members of Israeli forces gather at the site of where a Palestinian man tried to attack Israeli soldiers, by opening fire with a submachine gun and trying to throw a pipe bob, before he was shot by troops. May 18, 2021. Photo by Wisam Hashlamoun/FLASH90 *** Local Caption *** שגם חיילים חייל גופה

اسرائیلی فوجی نے فلسطینی شہری کے بلاوجہ قتل کا اعتراف کرلیا

غزہ(امت نیوز) اسرائیل نے فوج نے اعتراف کیا ہے کہ  اس نے ایک فلسطینی  شہری  کو  بغیر کسی وجہ کے قتل کیا  اور اس پر اسےکوئی پچھتاوا بھی نہیں۔

46 سالہ احمد کاہلہ کو 15 جنوری کو اسرائیلی فوج نے اپنی چوکی کے نزدیک گولی مار کر قتل کردیا تھا اور دعویٰ کیا تھا کہ مقتول اپنی گاڑی سے چاقو لے کر باہر نکلا تھا اور اہلکاروں کو قتل کرنا چاہتا تھا۔

اسرائیلی جارحیت کے وقت احمد کاہلہ کے ساتھ ان کا 20 سالہ بیٹا بھی گاڑی میں ساتھ بیٹھا تھا۔ بیٹے کے مطابق ان کی گاڑی چوکی پر روکی گئی اور ایک فوجی نے اسٹن گرینیڈ فائر کیا جو گاڑی کی چھت سے ٹکرا گیا۔

جس پر والد نے چیخ کر کہا کہ ہم پر حملہ کیوں کیا جا رہا ہے اسی وقت ایک افسر نے کالی مرچ کا اسپرے کیا اور والد کو گاڑی سے باہر نکالا اور دوسرے اہلکار نے فائرنگ کردی۔

اسرائیلی فوج کی تحقیقاری رپورٹ میں اعتراف کیا گیا ہے کہ جس وقت فلسطینی شہری کو شہید کیا گیا وہ نہتے تھے اور ان سے فوجی اہلکاروں کی جان کو کسی قسم کا خطرہ نہیں تھا۔ فوجی اہلکار کے پاس فائرنگ کا کوئی جواز نہیں تھا۔

رپورٹ سامنے آنے پر مقتول کے بھائی 45 سالہ زید نے عرب نیوز کو بتایا کہ اسرائیلی فوج نے میرے بھائی کو بغیر کسی وجہ کے قتل کرنے کا اعتراف کرلیا۔ ہم ان اہلکاروں کے خلاف قانونی چارہ جوئی کریں گے

یہ بھی دیکھیں

یوم یکجہتی کشمیر،پشاور میں  دفعہ 144 نافذ

گورنر حاجی غلام علی، نگران وزیراعلیٰ اعظم خان سمیت سیاسی، سماجی و سرکاری شخصیات تقریب میں شرکت کریں گے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔