اخترمینگل کا اپوزیشن کی اے پی سی میں شرکت کا فیصلہ

حکومت کی اتحادی جماعت بلوچستان نیشنل پارٹی کے سربراہ اخترمینگل کا کہنا ہے کہ مولانا فضل الرحمن نے اے پی سی کے لیے دعوت دی ہے بطور سیاسی جماعت اے ہی سی میں شرکت کریں گے۔

نجی ٹی وی کے مطابق حکومت کی اہم اتحادی جماعت بلوچستان نیشنل پارٹی کے سربراہ اختر مینگل نے اپوزیشن کی آل پارٹیز کانفرنس(اے پی سی) میں شرکت کا فیصلہ کرلیا ہے اور کہا ہے کہ اے پی سی میں بطور سیاسی جماعت شرکت کریں گے۔

بلوچستان نیشنل پارٹی کے سربراہ اختر مینگل اسلام آباد میں جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان سے ملاقات کے لئے ان کی رہائش پہنچ گئے،  ملاقات میں موجودہ ملکی سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال اور بجٹ کے حوالے سے بات چیت کی گئی۔

ملاقات کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمن کا کہنا تھا کہ امید ہے آئندہ ہفتے اے پی سی کا انعقاد ہوجائے گا، اپوزیشن قیادت کے جیلوں میں ہونے کی وجہ سے ہی اے پی سی جلدی ہو رہی، اختر مینگل نے اے پی سی میں شرکت کی دعوت کا مثبت جواب دیا جس کے لیے شکرگزار ہوں۔

بی این پی کے سربراہ اختر مینگل کا کہنا تھا کہ حکومت بننے سے پہلے چھ نکات پی ٹی آئی کے سامنے رکھے تھے، ابھی تک ان  نقاط پرعمل نہیں ہوا، حکومت کی جانب سے صرف تسلیاں ہی دی گئیں، ہمارا سب سے اہم مسئلہ لاپتہ افراد کی بازیابی ہے۔

اخترمینگل کا کہنا تھا کہ مولانا فضل الرحمن  نے اے پی سی کے لئے دعوت دی تھی، بطور سیاسی جماعت اے ہی سی میں شرکت کریں گے، ملکی سیاست میں ہمارا بھی کردار اور ذمے داریاں ہیں، اور اس حوالے سے جلد ہی پارٹی کی میٹنگ بلا کر مولانا کو مثبت جواب دیں گے۔