کرونا زدہ خاتون ایس ایچ او کو عہدے سے ہٹانے کی کہانی سامنے آ گئی

کراچی،خاتون ایس ایچ او ٹیپو سلطان شرافت خان کو عہدے سے ہٹانے کی وجہ سامنے آگئی۔

نجی ٹی وی کے مطابق ایک ہفتے قبل شرافت خان کورونا وائرس ہونے پر 15 دن کی چھٹیوں پر چلی گئی تھیں اور چارج سب انسپکٹر کو دیدیا تھا۔ دو دن بعد قائم مقام ایس ایچ او نے ایس او پی کی خلاف ورزی کرنے پرایک ہوٹل مینیجر کو پکڑا ، جس پر شرافت خان نے قائم مقام ایس ایچ او کو فون کرکے برہمی کا اظہارکیا اورکہا اسے فوری طور پر رہا کردو جس پر قائم مقام ایس ایچ او نے ایساکرنے سے انکار کردیا۔

شرافت خان اسی وقت قرنطینہ سے نکل کر تھانے پہنچ گئی اور تھانے میں اپنی آمد کرکے چارج سنبھال لینے کے بعد ہوٹل کے مینیجر کو رہا کردیا ، 2 دن بعد واقعے کی اطلاع ڈی آئی جی ایسٹ کو ملی تو انھوں نے شرافت خان پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ فوری طور پر چارج چھوڑ دو اور معطلی کا لیٹر جاری کردیا۔

تبصرے بند ہیں.